مراد علی شاہ سندھ میں کرپشن کے بادشاہ ، ایوارڈ دیا جائے، حلیم عادل شیخ

مراد علی شاہ سندھ میں کرپشن کے بادشاہ ، ایوارڈ دیا جائے، حلیم عادل شیخ

  

 ٹھٹھہ(این این آئی)پی ٹی آئی مرکزی رہنما حلیم عادل شیخ کراچی سے ٹھٹھہ کے علاقے مکلی پہچے۔ ان کے ہمراہ پی ٹی آئی کے رہنما سمیر میر شیخ پی ٹی آئی ڈسٹرکٹ ٹھٹھہ کے صدر ارسلان بروہی  ایڈوکیٹ ہوش محمد۔ امیر دین جوکھیو عامر ابڑو  جاوید درس اور دیگر شامل تھے۔حلیم عادل شیخ نے اسکول ٹیچر فہیم احمد کے انتقال پر ورثا سے ناریجو گوٹھ میں تعزیت کرنے کے بعد حقائق معلوم کئے۔دادو کے بئنک میں بے نامی اکاؤنٹ نکلے کی وجہ اسکول ٹیچر کو تحقیقات کے لئے نیب کی جانب سے نوٹس ملے تھے۔ذہنی پریشانی کے باعث ٹھٹھہ کے اسکول ٹیچر فہیم حسین انتقال کر گئے تھے 2014 میں فہیم احمد کے والد بھی اسی وجہ سے انتقال کر چکے ہیں۔فہیم احمد کی والدہ حینفا، اور بھائی کے نام پر 36 کروڑ روپے جعلی اکاؤنٹ بنا کر ان متاثرین کے اکاؤنٹ میں رکھے گئے۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے حلیم عادل شیخ نے کہا سندھ حکومت میں چور بیٹھے ہیں تین کھرب روپے سے زائد پنشن کی مد میں کرپشن ہوئی۔ مراد علی شاہ کو ایوارڈ دیا جائے تاریخ کی سب سے بڑی کرپشن کی گئی ہے، سندھ کی عوام کے اربوں روپے جعلی کھاتے بنا کر ھڑپ کئے جاتے ہیں۔ مراد علی شاہ کے فرنٹ مین سلیم باجاری، مراد ڈاوچ نے ایسے اکاؤنٹ بنوا کر کرپشن کی۔جنہوں نے 84 جعلی اکاؤنٹ بنا کر کرپشن کی گئی ہے، یہ غریب اسکول ٹیچر کے پاس کچھ نہیں ان کو پتا ہی نہیں تھا کروڑوں روپے ان کے اکاؤنٹ میں منتقل کئے گئے۔اگر یہ لوگ جرم میں شامل ہوتے تو آج پانچ لاکھ کے گھر میں نہ رہتے نہ ان کی بھائی سیکیورٹی گارڈ کی نوکری کرتے۔؟ سینیٹ الیکشن کے بعد سندھ کے وزراء تبدیل ہونگے لیکن وزیر اعلیٰ کو تبدیل نہیں کیا جائیگا۔مراد علی شاہ سندھ کی تاریخ کرپٹ وزیر اعلیٰ ہے۔

حلیم عادل شیخ

مزید :

صفحہ آخر -