اراضی سے زبردستی بیدخلی کسی صورت قبول نہیں کرینگے‘ امیر بادشا ہ 

اراضی سے زبردستی بیدخلی کسی صورت قبول نہیں کرینگے‘ امیر بادشا ہ 

  

سخاکوٹ(نمائندہ  پاکستان) زمینوں سے زبردستی بیدخلی کسی صورت قبول نہیں کرینگے اور اگر مزارع کو طاقت کے ذریعے بیدخل کرنے کی کوشش کی گئی تو کسی بھی ناخوشگوارواقعے کی ذمہ داری مالکان پر ہو گی۔ طویل عرصہ سے بنجر اراضی میں محنت مزدوری کرکے اسے کاشت کرنے کا قابل بنایا ہے اور بچوں کے لئے رزق تلاش کر رہے ہیں اس لئے علاقائی رسم و رواج اور جرگہ کے ذریعے مسئلے کا پُر امن حل تلاش کیا جائے۔ ضلعی انتظامیہ ملاکنڈ حالات کے کشیدگی کا نوٹس لیں اور مالک و مزارع کے درمیان مسئلہ حل کرانے میں کردار ادا کریں۔ ان خیالات کا اظہارتحصیل درگئی کے یونین کونسل کوپر کے علاقے خادگزئی میں زمین سے بیدخلی کے خلاف منعقدہ اجتماع سے مزارع امیر بادشاہ، سابق تحصیل ناظم درگئی شفیع اللہ خان، عوامی نشنل پارٹی کے رہنماؤں جمرو ز خان مہمند، حاجی حسین احمد خان، مزدور کسان پارٹی کے صوبائی جائنٹ سیکرٹری عبد الرحمان، صوبائی نائب صدر(بنگش گروپ) حاجی معتبر خان، سابق صوبائی جنرل سیکرٹری مزدور کسان پارٹی حفیظ الرحمان،سابق ناظم نصیر احمد اور مرکزی صدر نشنل سٹوڈنٹس فیڈریشن احمد خان سمیت دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ مزارع امیر بادشاہ نے کہا کہ عرصہ دراز سے قبضہ زمین میں دن رات محنت کرکے اسے کاشت اور فصل کا قابل بنایا ہے اسلئے زبردستی بیدخلی کی بجائے علاقائی رسم و رواج اور جرگہ کے ذریعے مسئلے کا حل چاہتے ہیں۔سابق تحصیل ناظم شفیع اللہ خان، حاجی حسین احمد، جمروز خان مہمند اور دیگر مقررین نے کہا کہ اگر امیر بادشاہ کو زمین سے زبردستی بیدخل کرنے کی کوشش کی گئی تو ہم کسی بھی راست اقدام اٹھانے سے گریز نہیں کرینگے۔ مقررین نے کہا کہ ہم جنگ فساد نہیں چاہتے لیکن کسی کو زبردستی بیدخلی کی بھی اجازت نہیں دینگے اس لئے مزارع کیساتھ ظلم و زیادتی کرنے اور اسے زمین سے زبردستی بیدخل کرنے کی بجائے افہام و تفہیم اور علاقائی رسم و رواج کے ذریعے مسئلے کا حل نکالا جائے۔ مقررین نے کہا کہ خان خوانین کے غیر مناسب رویے اور زبردستی بیدخلی کی کوشش کی وجہ سے حالات کشیدگی کی طرف جارہے ہیں جس میں ناخوشگوار واقعہ رونماہوسکتا ہے جس کی تمام تر ذمہ داری خان خوانین پر ہو گی کیونکہ علاقے میں کئی مالکان اور مزارع کے درمیان ایسے ہی مسئلے مذاکرات اور علاقائی رسم و رواج کے ذریعے حل ہو چکے ہیں اس لئے علاقہ خادگزئی یونین کونسل کوپر میں بھی درپیش مسئلہ علاقائی رسم و رواج اور جرگے کے ذریعے حل کیا جانا چاہئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -