ماں کے تشدد سے شدید زخمی ہونے والے بچے نے ڈاکٹروں کے استفسار پر ایسی دردناک بات کہہ دی کہ جان کر آپ کی آنکھیں بھی نم ہوجائیں

ماں کے تشدد سے شدید زخمی ہونے والے بچے نے ڈاکٹروں کے استفسار پر ایسی دردناک ...
ماں کے تشدد سے شدید زخمی ہونے والے بچے نے ڈاکٹروں کے استفسار پر ایسی دردناک بات کہہ دی کہ جان کر آپ کی آنکھیں بھی نم ہوجائیں

  

استانہ(مانیٹرنگ ڈیسک) ماں کی اپنے بچوں کے لیے محبت ایک عالمگیر سچائی ہے لیکن بعض اوقات ماؤں کی طرف سے بچوں پر تشدد یا اسی نوع کے دیگر اقدامات دیکھنے میں آتے ہیں کہ اس عالمگیر سچائی پر سے ایمان اٹھنے لگتا ہے۔ قازقستان کے شمالی شہر تراز کی ایک سپرمارکیٹ میں ایک 6سالہ بچہ انتہائی زخمی حالت میں گھوم رہا تھا۔ اس کے بازو ، ٹانگیں اور پشت تشدد اور جلائے جانے کے زخموں سے بھری ہوئی تھی۔ زخموں سے لگتا تھا کہ اسے بیلٹ اور چھڑی سے بری طرح پیٹنے کے علاوہ استری یا کسی اور گرم چیز سے جلایا بھی گیا تھا۔ لوگوں نے اس کی حالت دیکھ کر اسے ہسپتال پہنچایا جہاں ڈاکٹروں نے اس کا علاج شروع کر دیا۔ طبی امداد کے دوران بچے کی ویڈیو بنائی گئی جو انٹرنیٹ پر بہت زیادہ دیکھی جا رہی ہے۔ اس ویڈیو میں ڈاکٹر بچے کے زخموں پر مرہم پٹی کرتے ہوئے اس سے گفتگو بھی کر رہا ہوتا ہے۔ وہ بچے سے پوچھتا ہے کہ وہ اس قدر زخمی کیسے ہوا۔ بچہ بتاتاہے کہ اس کی ماں نے اسے ڈنڈوں سے پیٹا اور گرم لوہے سے داغا ہے، ڈاکٹر نے وجہ پوچھی تو بچے نے معصومیت سے جواب دیا کہ میں نے شرارت کی تھی۔ ڈاکٹر نے اس سے اس کی ماں کا پتا پوچھا تاکہ اسے ہسپتال بلا یا جائے جس پر بچہ انتہائی خوفزدہ ہو گیا اور بلند آواز میں چلانے لگا ’’نہیں۔۔۔نہیں‘‘۔ ساتھ ہی اس کی آنکھوں سے آنسو بہہ نکلے۔ رپورٹس کے مطابق بچہ اب پولیس کی تحویل میں ہے اور پولیس اس کی ماں کو تلاش کر رہی ہے، لیکن تاحال اسے کامیابی حاصل نہیں ہوئی، کیونکہ ننھا بچہ اپنے ساتھ ہونے والے بدترین سلوک کے باوجود اپنی ماں کے بارے میں پولیس کو کچھ بھی بتانے سے انکاری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس