سپریم کورٹ کا حکومتی پالیسیاں اور قوانین اردو میں شائع اور آویزاں کرنے کا حکم

سپریم کورٹ کا حکومتی پالیسیاں اور قوانین اردو میں شائع اور آویزاں کرنے کا ...

اسلام آباد(اے این این) سپریم کورٹ نے تمام وفاقی اداروں کو اپنی پالیسیاں اور قوانین کا اردو ترجمہ شائع اور آویزاں کرنے کا حکم دیا ہے۔ جمعہ کو سپریم کورٹ میں اردو کو سرکاری زبان قرار دینے کے حوالے سے کیس کی سماعت جسٹس جواد ایس خواجہ کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے کی۔ سماعت کے موقع پر جسٹس جواد ایس خواجہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ بلوچستان نے پنجابی رائج کر دی لیکن پنجاب نہ کر سکا، تمام وفاقی ادارے اپنی پالیسیاں اور قوانین کا اردو ترجمہ شائع کریں۔ تمام وفاقی ادارے اپنی دستاویزات اور فارم انگریزی کے ساتھ اردو میں بھی منتقل کریں۔سیکرٹری اطلاعات نے عدالت کو بتایا کہ وزیراعظم نوازشریف نے اردو کے دفاتر میں استعمال کا انتظامی حکم 6 جولائی کو جاری کر دیا تھا جس کے مطابق وفاقی حکومت کے تمام ادارے اپنی ویب سائٹس تین ماہ میں اردو میں منتقل کردیں گے جب کہ صدر مملکت، وزیراعظم اور تمام وفاقی وزرا ملک کے اندر اور باہر اپنی تقاریر اردو میں کریں گے۔ عدالت نے وزیراعظم کے حکم نامہ پر اظہار اطمینان کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 22اگست تک ملتوی کردی۔

مزید : صفحہ اول