آرمی کیخلاف بیان پر سابق صدر کو وزیراعظم کی طرف سے خفیہ پیغام بھیجے جانے کا انکشاف

آرمی کیخلاف بیان پر سابق صدر کو وزیراعظم کی طرف سے خفیہ پیغام بھیجے جانے کا ...
آرمی کیخلاف بیان پر سابق صدر کو وزیراعظم کی طرف سے خفیہ پیغام بھیجے جانے کا انکشاف

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) سابق صدرآصف علی زرداری کی طرف سے عسکری حکام سے متعلق بیانات کے بعد سیاسی میدان میں ہلچل مچ گئی تھی اور وزیراعظم نواز شریف نے اُن سے ملاقات بھی نہیں کی تھی لیکن اِسی دوران وزیراعظم نواز شریف کی طرف سے آصف علی زرداری کو خفیہ پیغام بھیجے جانے کا انکشاف ہواہے جس میں کچھ عرصہ صبر کرنے اور اپنے مجبوری بیان کی گئی ۔یہ انکشاف سینئر صحافی ہارون الرشید نے کیا۔

اپنے کالم میں ہارون الرشید نے لکھاکہ جسٹس جواد ایس خواجہ سمیت دیگر جج صاحبان کے پاس اتنا وقت ہی نہیں کہ وہ کرپشن کی جڑیں کاٹ سکیں ، چند ماہ بعد سبکدوش ہوجائیں گے ، جنرل راحیل شریف کو زرداری صاحب نے چیلنج کردیا کہ ان کے منصب کی مدت فقط تین برس ہے جبکہ لوٹ مار کرنے والے ہمیشہ رہیں گے اور فوج کی اینٹ سے اینٹ بجانے کی دھمکی دی لیکن پھر ن لیگ اور ان کے رفقاءکھل کر ساتھ نہ دے سکے ،مگر شریف خاندان اور دوسرے سیاسی گھرانوں سے تعاون کی کسی قدر توقع نہ ہوتی تو زرداری صاحب یہ جسارت کبھی نہ کرتے۔

اُنہوں نے لکھاکہ ”الیکشن 2013ءسے قبل شہباز شریف دھاڑا کرتے تھے، زرداری کو کھمبے پر لٹکا دوں گا، سڑک پر گھسیٹوں گا، اس کا پیٹ پھاڑ دوں گا۔ اب کہتے ہیں، ازراہ کرم زرداری صاحب مجھے معاف کردیں۔ لوٹ مار کا جمہوری نظام بچانے میں وہ ہمارے ہم نفس ہیں۔ سندھ کی صوبائی حکومت نے مار دھاڑ کی انتہا کردی حتیٰ کہ ایم کیو ایم کی مدد سے رینجرز کی مشکیں کسنے پر تلی ہے، خادم اعلیٰ اب ان کا نام تک نہیں لیے، اس لئے کہ پیپلزپارٹی مری تو (ن) لیگ کو بھی مار ڈالنے کی کوشش کرے گی، نواز شریف زرداری صاحب کو پیغام پر پیغام بھیج رہے ہیں،”صبر کیجئے، صبر، فی الحال میں مجبور ہوں“۔

مزید : لاہور