پشاور خود کش دھماکہ کے بعد پنجاب بھر میں سیکیورٹی ہا ئی الرٹ

پشاور خود کش دھماکہ کے بعد پنجاب بھر میں سیکیورٹی ہا ئی الرٹ

لاہور( رپورٹ؛ یونس باٹھ) پشاور میں خود کش دھماکے کے بعدپولیس سمیت دیگر قانون نافذ کرنیوالے اداروں نے پنجاب بھر میں انتخابات کے جلسے جلوسوں کے موقع پر دہشت گردوں کی ممکنہ کارروائیوں کے خطرے کے پیش نظر سکیورٹی کو ہا ئی الرٹ کر دیا ہے ۔جبکہ آئی جی پو لیس پنجاب نے رات گئے اپنے ایک پیغام میں پنجاب بھر کے تما م اعلی افسران کوانتخابات کی کارنر میٹنگ اور جلسے جلوسوں کے دوران سکیورٹی کے فول پروف انتظامات مکمل کر نے کی ہدایت کر دی ہے ۔ صوبائی دارالحکومت سمیت بڑے شہروں کے داخلی راستوں پر اہلکاروں کی تعداد بڑھا کر چیکنگ کا نظام سخت کر نے کا حکم دیا گیا ہے۔ پولیس اہلکاروں کو امیدواروں کے اجلاس کے مواقع پروہاں تعینات رہنے کا حکم جاری کیا گیا ہے جبکہ سیاستدانوں کے لیے اعلی افسران کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ کا رنر میٹنگ یا جلسے جلوسوں کے دوران وہاں شرکت کر نے والے افراد کی تلاشی کے بعد انھیں کا رنر میٹنگ یا جلسے جلوسوں کے دوران اندر جانے کی اجازت دی جائیگی‘ صرف لاہور میں دس ہزار سے زائد اہلکار حفاظتی ڈیوٹیاں سر انجام دیں گے ۔ تفصیلات کے مطابق انتخابات پر دہشتگردی کے خطرے کے پیش نظر پولیس سمیت دیگر قانون نافذ کرنیوالے اداروں نے تمام انتظامات مکمل کر لئے ہیں اور اس سلسلہ میں ذمہ دار افسروں نے رات گئے پشاور ایک کا رنر میٹنگ میں خود کش دھماکے کے بعد انہیں حتمی شکل دی ہے ۔ صوبائی دارالحکومت پنجاب کے دیگر بڑے شہروں میں سکیورٹی کو ہائی الرٹ کر دیا گیا جبکہ داخلی راستوں پر خصوصی چیکنگ کے احکامات جاری کر کے اہلکاروں کی تعداد بڑھا دی گئی ہے اور ہر آنے جانیوالی گاڑی کی جامع تلاشی لی جارہی ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ حفاظتی انتظامات کے سلسلہ میں تمام بڑی سیا سی جماعتوں کی انتظامیہ سے ملکر سکیورٹی پلان ترتیب دیا جائے گا ۔ سیاستدانوں کی اپنی سکیورٹی بھی حفاظتی ڈیوٹی پر موجود ہو گی جبکہ پارکنگ کو ممنوعہ قرار دیا گیا ہے ۔ کا رنر میٹنگ یا جلسے جلوسوں کے دوران وہاں شر کت کے لیے آنے والے تما م افراد کو میٹل ڈیٹکٹر سے چیک کرنے کے بعد اند ر داخل ہونے کی اجازت دی جائے گی ۔علاوہ ازیں رش والے مقامات پر سادہ کپڑوں میں بھی اہلکار تعینات کر دیے جائیں گے۔کیپٹل سٹی پولیس چیف احمدبی اے ناصرنے کہا ہے کہ لاہور پولیس انتخابات کے موقع پرشہریوں کو مکمل امن وامان ا ورسیکورٹی فراہم کرنے تک چین سے نہیں بیٹھے گی ۔کیپٹل سٹی پولیس چیف بی اے ناصرنے کہا ہے کہ انتخابات کے موقع پر امن و امان کی فضاء کے قیام اور کسی بھی ممکنہ تخریبی کاروائی سے نمٹنے کیلئے لاہور پولیس پوری طرح چوکس رہے گی اور انہوں نے ہدایت کی کہ تمام ڈویژنل ایس پیز ، سپر وائزری پولیس آفیسرز ، ایس ایچ اوز ، اسسٹنٹ سب انسپکٹراور سب انسپکٹرزموبائل سکواڈز کی موثر پٹرولنگ یقینی بنائیں۔سی سی پی او نے کہا کہ کا رنر میٹنگ یا جلسے جلوسوں کے دوران وہاں شر کت کے لیے آنے والے تما م افراد کو بھی مکمل سیکورٹی فراہم کی جائے گی اور اس ضمن میں پولیس اہلکاروں کے علاوہ افسران کی بھی ڈیوٹی لگا دی گئی ہے۔ سی سی پی او لاہور نے آگاہ کیا ہے کہ لاہور پولیس نے انتخابات کے موقع پر امن وامان برقرار رکھنے کیلئے ایک جامع سیکورٹی پلان ترتیب دیا ہے جس کے تحت 13 ہزار سے زائد پولیس جوان اپنے فرائض سر انجام دیں گے اور صوبائی دارالحکومت میں کا رنر میٹنگ یا جلسے جلوسوں کے دوران وہاں شر کت کے لیے آنے والے تما م افراد کو مکمل سیکورٹی فراہم کریں گے ۔سی سی پی او نے بتایا کہ شہر کے داخلی راستوں کی کڑی نگرانی اور اہم سرکاری عمارتوں ، بس و ویگن اسٹینڈز اور کاروباری و تجارتی مراکز پر سفید پارچات میں نفری بھی تعینات کی جائے گی ۔نگران حکومت کی جانب سے تمام محکموں کے افسران ، ضلعی افسرانانتخابات کے دن ڈیوٹیوں پر موجود ہوں گے ۔

مزید : صفحہ اول


loading...