ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیوں پرمانیٹرنگ ٹیموں نے آنکھیں موند لیں

ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیوں پرمانیٹرنگ ٹیموں نے آنکھیں موند لیں

لاہور( ج ا ، ش م ) صوبائی دارالحکومت میں امیدواروں نے الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاقی کی دھجیاں اڑادی،سب سے زیادہ خلاف ورزیاں قومی اسمبلی کے حلقوں123، 124،126،127،128،129،131،135 اور136میں دکھائی دیتی ہیں۔ الیکشن کمیشن اور مانیٹرنگ ٹیموں نے آنکھیں بند کر لیں۔تفصیلات کے مطابق شہرکی اہم سڑکوں کینال روڈ ،مین بلیوارڈ گلبرگ ، والٹن روڈ کینٹ ، ڈی ایچ اے، فیروز پور روڈ، شاہدرہ سمیت مختلف علاقوں میں بڑی بڑی فلیکسیں ، بینرز ،ہورڈنگ بورڈز اور دیو ہیکل پوسٹرز الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کا منہ چڑا رہے ہیں ۔ ضلعی اور زونوں کی انتظامیہ خانہ پری کیلئے چند امیدوارں کی بینرز اور فلیکس اتار لیتی ہے ۔ذرائع کے مطابق شہرمیں انتخابی سرگرمیوں کے دوران ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے 1480کیسز الیکشن کمیشن کو بھجوائے گئے جن میں سے 900کیسز پر لوکل گورنمنٹ کو ایکشن لینے کی ہدایت کی گئی مگر لوکل گورنمنٹ صرف نوٹسز جاری کرنے تک اکتفا کر رہی ہے جس کے باعث امیدواروں نے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنا معمول بنا لیا ۔اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر لاہور کیپٹن (ر) انوار الحق نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیاں کرنیو الے امیدواروں کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں تاہم سنگین خلاف ورزی کے مرتکب امیدواروں کیخلاف رپورٹس مرتب کرکے لوکل گورنمنٹ کے ذریعے الیکشن کمیشن کو بھجوائی جارہی ہیں ۔

ضابطہ اخلاق/ خلاف ورزیاں

مزید : صفحہ اول


loading...