انچارج آفیسر پولنگ سٹیشنز کو مجسڑیٹ کے اختیارات تفویض

انچارج آفیسر پولنگ سٹیشنز کو مجسڑیٹ کے اختیارات تفویض

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر ،نیوز ایجنسیاں) الیکشن کمیشن نے انچارج آفیسر پولنگ سٹیشنز کے مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات سے متعلق نوٹیفیکیشن جاری کرتے ہوئے وضاحت کی ہے کہ پولنگ سٹیشن پر فوجی جوانوں کو مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات دینے کی خبریں غلط اور بے بنیادہیں ۔ الیکشن کمیشن کے مطابق پولنگ سٹیشن پر فوج تعینات ہو گی فوجی اہلکار کسی بھی خلاف ورزی کی اطلاع پریزائیڈنگ افسر کو دینے کے پابند ہوں گے مناسب کاروائی نہ ہونے پر فوجی اہلکار اپنے سینئر افسران کو آگاہ کریں گے، پولنگ سٹیشنز پر فوجی اہلکار 23تا 27جولائی تک تعینات جبکہ انچارج پولنگ سٹیشنز کے پاس 23سے 27جولائی تک مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات ہوں گے۔دریں اثناء پولنگ سٹیشن پر فوجی جوانوں کو مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات دینے کے حوالے سے خبریں غلط اور بے بنیاد ہیں کیونکہ انچارج آفیسر جس کے کنٹرول میں تین سے چار پولنگ سٹیشن ہوں گے، صرف اسے مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات دیئے گئے ہیں۔ اس حوالے سے ٹی وی چینلز پر چلنے والی یہ خبر کہ پولنگ سٹیشن پر موجود فوجی جوانوں کو مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات دیئے گئے ہیں قطعی طور پر غلط اور الیکشن کمیشن کے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے برعکس ہے۔جبکہ الیکشن کمیشن نے پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر پا ر ٹی چیئرمین عمران خان کو نوٹس جاری کر تے ہوئے پیمرا حکام کو ہدایت کی ہے کہ ٹی وی چینلز کو نفرت انگیز اور متنازعہ اشتہارات نشر کرنے سے روکا جائے ،پی ٹی آئی کی جانب سے میڈیا پر چلائے جانیوالے اشتہارات میں مخالف سیاسی جماعتوں کے سربراہوں پر تنقید ضابطہ اخلا ق کی خلاف ورزی ہے ۔الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری نوٹس کے مطابق تحریک انصاف کی جانب سے میڈیا پر چلائے جانیوالے اشتہارا ت ناشائستہ ،غیر مہذب ہیں اور ان میں دیگر سیاسی جماعتوں کے خلاف ناشائستہ ،غیر مہذبانہ اور گندی زبان استعمال کی گئی ہے جو کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کردہ ضابطہ اخلاق کی صریح خلاف ورزی ہے اس حوالے سے مختلف سیاسی جماعتوں اور امیدواروں نے الیکشن کمیشن کو باقاعدہ شکایات کی ہیں نوٹس میں الیکشن کمیشن نے پارٹی کے چیرمین عمران خان سے وضاحت طلب کی ہے کہ وہ ایسے اشتہارات جاری کرنے کا جواب پیش کریں اور حکم دیا گیا ہے کہ ایسے اشتہارات فوری طور پر بند کردئیے جائیں جس میں ناکامی کی صورت میں الیکشن کمیشن ان کیخلاف قانون کے مطابق کاروائی کی جائے گی الیکشن کمیشن کی جانب سے چیرمین پیمرا کے نام لکھے گئے مراسلے میں ہدایت کی گئی ہے کہ تحریک انصاف سمیت تمام سیاسی جماعتوں کو ایک دوسرے کیخلاف نفرت انگیز اور الزامات پر مبنی اشتہارات چلانے کی کسی صور ت اجازت نہیں ہے اس حوالے سے تمام ٹی وی چینلز کو پابند کیا جائے کہ وہ سیاسی جماعتوں کی جانب سے دئیے جانیوالے ایسے اشتہارات ہرگز نہ چلائیں جن میں دوسری سیاسی جماعتوں اور ان کے قائدین کیخلاف غلط زبان استعمال کی گئی ہو الیکشن کمیشن نے پیمرہ کو ہدایت کی ہے کہ خلاف ورزی کرنیوالے ٹی وی چینلز کیخلاف فوری کاروائی کی جائے ۔

الیکشن کمیشن

مزید : صفحہ اول


loading...