کرپشن و اختیارات کا ناجائزاستعمال ، سابق ایس ایچ او گرفتار ، احتساب عدالت کے روبرو پیش 14روزہ ریمانڈ پر نیب کے حوالے

کرپشن و اختیارات کا ناجائزاستعمال ، سابق ایس ایچ او گرفتار ، احتساب عدالت کے ...

لاہور(خبرنگار، کرائم رپورٹر) نیب لاہور نے کرپشن و اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزام میں پنجاب پولیس کا ایس ایچ اوکو گر فتا ر کر نے کے بعد احتساب عدالت کے روبرو پیش کر کے ملزم کا 14روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کر لیا۔تفصیلا ت کے مطابق گزشتہ روز نیب لاہور نے بڑی کارروائی کر تے ہوئے غیر قانونی طور پر عوام سے دھوکہ دہی کے ملزم ندیم احمد کو حبس بیجا میں رکھنے اور 30 لاکھ روپے رشوت وصول کرنیوا لے سابق ایس ایچ او تھانہ برکی ملزم نوید اعظم کو گرفتار کر لیا ،نیب اعلامیہ کے مطابق سابق ایس ایچ او تھانہ برکی ملزم نوید اعظم نے غیر قانونی طور پر عوام سے دھوکہ دہی کے ملزم ندیم احمد کو حبس بیجا میں رکھا اور دوران حراست ملزم ایس ایچ او نو یداعظم کی جانب سے 30 لاکھ روپے بطور رشوت وصول کیے گئے، نیب کی جانب سے کہا گیا ہے اس دوران ملزم ایس ایچ او نوید اعظم نے اہلیہ کے نام غیر قانونی طور پر متعد د جائیدادیں بھی بنائیں،جائیدادوں کی خرید کی مد میں زیر حراست ملزم ندیم احمد سے خطیر رقوم وصول کی گئی ۔نیب لاہور پہلے ہی ملزم ندیم احمد کیخلاف عوام سے دھوکہ دہی کے ذریعے کروڑوں روپے وصول کرنے کے حوالے سے تحقیقات کر رہا ہے، ملزم ندیم احمد کے انکشا فا ت پر ملزم سابق ایس ایچ او کی گرفتاری عمل میں لائی گئی،نیب حکام کی جانب سے ملزم ایس ایچ او نوید اعظم کو گرفتا ر ی کے بعد احتساب عدا لت کے روبرو پیش کیا گیا اور تفتیش کیلئے ریمانڈ دینے کی استدعا کی گئی جسے منظور کرتے ہوئے احتساب عدالت نے ملزم کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب حکام کے حوالے کر دیا ۔

ایس ایچ او گرفتار

مزید : علاقائی


loading...