این اے 127 ، پی پی 173 لاہورکے متبادل امیدواروں کو شیر کا نشان الاٹ

این اے 127 ، پی پی 173 لاہورکے متبادل امیدواروں کو شیر کا نشان الاٹ

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) الیکشن کمیشن نے مسلم لیگ ن کی درخواست منظور کرتے ہوئے این اے 127 اور پی پی 173 لاہور سے مریم نواز کے متبادل امیدواروں کو شیر کا نشان دے دیا، این اے 127 سے علی پرویز اورپی پی 173 سے عرفان شفیع کھوکھر شیر کے نشان پر الیکشن لڑیں گے،این اے 146 پاکپتن سے رانا زاہد کے متبادل امیدوار رانا ارادت شریف کو بھی شیر کا نشان دیدیا گیا۔منگل کو الیکشن کمیشن میں مریم نواز کی نااہلی کے بعد این اے 127اور پی پی 173 سے متبادل امیدواروں کو انتخابی نشانات دینے سے متعلق کیس کی سماعت چیف الیکشن کمشنر کی صدارت میں پانچ رکنی کمیشن نے کی ،ن لیگ کے وکلاء الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے اور موقف اپنایا کہ مریم نواز کی نااہلی کے بعد متبادل امیدواروں کو شیر کا نشان دیا جائے،این اے 127 سے علی پرویز،پی پی 173 سے عرفان شفیع کھوکھر کو شیر کا انتخابی نشان دیا جائے،دونوں حلقوں سے مریم نواز کے متبادل امیدواروں کے نام فارم 33 میں موجود ہیں،الیکشن کمیشن دونوں حلقوں کے فارم 33 پر نظر ثانی کرے، ن لیگ کے وکیل کے کہا کہ این اے 146 پاکپتن سے رانا زاہد کی نااہلی کے بعد متبادل امیدوار رانا ارادت شریف کو شیر کا نشان دیا جائے۔الیکشن کمیشن نے فیصلہ محفوظ کرلیا ، بعد ازاں فیصلہ سناتے ہوئے الیکشن کمیشن نے مسلم لیگ ن کی درخواست منظور کرلی، الیکشن کمیشن نے این اے 127،پی پی 173 لاہور سے مریم نواز کے متبادل امیدواروں کو شیر کا نشان دے دیا، این اے 127 سے علی پرویز اورپی پی 173 سے عرفان شفیع کھوکھر شیر کے نشان پر الیکشن لڑیں گے،الیکشن کمیشن نے این اے 146 پاکپتن سے رانا ارادت شریف کو بھی شیر کا نشان دیدیا،تینوں حلقوں کے فارم 33 کے نظر ثانی کی منظوری بھی دیدی گئی۔

مزید : صفحہ آخر


loading...