غیرقانونی قابض پولیس اہلکار گھرفوری طورپر خالی کردیں،قبضہ نہ چھوڑا تو رینجرز کو مدد کیلئے بلائیں گے،چیف جسٹس

غیرقانونی قابض پولیس اہلکار گھرفوری طورپر خالی کردیں،قبضہ نہ چھوڑا تو ...
غیرقانونی قابض پولیس اہلکار گھرفوری طورپر خالی کردیں،قبضہ نہ چھوڑا تو رینجرز کو مدد کیلئے بلائیں گے،چیف جسٹس

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیف جسٹس پاکستان نے سرکاری گھروں کی غیرقانونی الاٹمنٹ سے متعلق ازخودنوٹس میں ریمارکس دیتے ہوئے کہاہے کہ غیرقانونی قابضین گھرفوری طورپرخالی کریں، پولیس اہلکارغیرقانونی رہائش پذیرہیں، پولیس نے گھرخالی نہ کئے تورینجرزکومددکےلئے بلائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے سرکاری گھروں کی غیرقانونی الاٹمنٹ سے متعلق ازخودنوٹس کی سماعت کی۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایاکہ اسلام آباد پولیس کے اہلکارگھرخالی نہیں کررہے،پولیس کے ذمہ 35 کروڑکرایہ واجب الادا ہے۔

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ غیرقانونی قابضین گھرفوری طورپرخالی کریں، پولیس اہلکارغیرقانونی رہائش پذیرہیں، پولیس نے گھرخالی نہ کئے تورینجرزکومددکےلئے بلائیں گے۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ پولیس 35 کروڑاداکرے تورقم ڈیم فنڈزمیں جائےگی،جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ سرکاری گھرمیرٹ پرالاٹ ہونے چاہئیں۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...