’ چیف جسٹس کو چاہیے کہ نگران وزیراعظم کو بلائے، ساری عمر تو اسے والدین کی قبرپر فاتحہ پڑھنا یاد نہیں آیا لیکن۔۔۔‘رﺅف کلاسرا نے ایسی سخت ترین بات کہہ دی کہ کھلبلی مچادی

’ چیف جسٹس کو چاہیے کہ نگران وزیراعظم کو بلائے، ساری عمر تو اسے والدین کی ...
’ چیف جسٹس کو چاہیے کہ نگران وزیراعظم کو بلائے، ساری عمر تو اسے والدین کی قبرپر فاتحہ پڑھنا یاد نہیں آیا لیکن۔۔۔‘رﺅف کلاسرا نے ایسی سخت ترین بات کہہ دی کہ کھلبلی مچادی

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر صحافی و تجزیہ کار رﺅف کلاسرانے کہا ہے کہ نگراں وزیر اعظم ناصرالملک کو ویسے تو اپنے والدین کی یاد نہیں آئی لیکن نگراں وزیر اعظم بنتے ہی وہ عوام کے ٹیکسوں کے پیسوں سے فاتحہ خوانی کیلئے پہنچ گئے، چیف جسٹس کو چاہیے کہ ان سے یہ سارے پیسے وصول کریں۔

ٹوئٹر پر صحافی عدیل راجہ کے ٹویٹ کے جواب میں رﺅف کلاسرا نے لکھا ’ چیف جسٹس کو نگراں وزیر اعظم ناصرالملک سے ہیلی کاپٹر پروٹوکول کا خرچہ لینا چاہیے جو حلف اٹھاتے ہی اڑان بھری اور قبرستان والدین کی فاتحہ کیلئے جاپہنچے۔ قوم کے ٹیکسوں سے سابق چیف جسٹس والدین کی قبروں پر فاتحہ پڑھ آیا، عمر بھر یاد نہ آئی، وزیر اعظم بنتے ہی فاتحہ یاد آگئی۔ حلوائی کی دکان پر نانا جی کی فاتحہ “۔

صحافی عدیل راجہ نے اپنے ٹویٹ میں اس بات پر احتجاج کیا تھا کہ ڈیم کیلئے اس کی تنخواہ نہ کاٹی جائے ورنہ اچھا نہیں ہوگا۔ اس سے قبل پاک فوج کی جانب سے دیامر بھاشا ڈیم اور مہمند ڈیم کیلئے سپریم کورٹ کے بنائے گئے اکاﺅنٹ میں افسران کی 2 روز اور سپاہیوں کی ایک ایک روز کی تنخواہ دینے کا اعلان ہوا تھا ، سٹیٹ بینک نے بھی تنخواہیں دینے کا اعلان کیا تھا۔

واضح رہے کہ نگراں وزیر اعظم ناصرالملک نے وزارت عظمیٰ کا حلف اٹھاتے ہی اپنے آبائی علاقے سوات کا دورہ کیا تھا ، وہ ہیلی کاپٹر پر سوات گئے جبکہ ان کے قافلے میں 22 گاڑیاں شامل تھیں ۔ ان کے اس شاہانہ دورے کے اخراجات سرکاری خزانے سے ادا کیے گئے تھے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...