’ اگر خبر چھاپی تو۔۔۔ ‘ممبئی حملہ کیس کی سماعت، ملزمان کے وکیل نے صحافیوں کوخبردار کردیا

’ اگر خبر چھاپی تو۔۔۔ ‘ممبئی حملہ کیس کی سماعت، ملزمان کے وکیل نے صحافیوں ...
’ اگر خبر چھاپی تو۔۔۔ ‘ممبئی حملہ کیس کی سماعت، ملزمان کے وکیل نے صحافیوں کوخبردار کردیا

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )اسلام آباد کی انسداددہشتگردی عدالت میں ممبئی حملہ کیس کی سماعت کے دوران وزارت داخلہ نے بھارتی گواہوں سے متعلق جواب جمع کرانے کیلئے پھر مہلت مانگ لی ہے جبکہ عدالت نے پراسیکیوٹرقاضی مصباح الحق کی سیکیورٹی فراہم کرنے کی درخواست مستردکردی، سماعت کے بعد ملزمان کے وکل نے صحافیوں کو خبردار کیاکہ سماعت ان کیمرہ ہے ، اگر کوئی خبرچھاپی تو درخواست دوں گا۔

تفصیلات کے مطابق عدالت نے وزارت داخلہ کی مزید مہلت کی درخواست منظور کرتے ہوئے ہدایت کی کہ آئندہ سماعت پر واضح پوزیشن سے آگاہ کریں، تحریری طور پر بتائیں کتنا وقت چاہیے۔دوسری طرف مقدمے میں نامزد چھ ملزمان حماد امین، عبد الواجد، مظہر اقبال، محمد یونس ،شاہد جمیل اور سفیان ظفر کی طرف سے ضمانت کی درخواست دائر کی گئی۔دوران سماعت وزارت داخلہ کے پراسیکیوٹر قاضی مصباح الحسن نے سیکیورٹی فراہمی کیلئے درخواست دی جس پر جج نے کہا کہ سیکیورٹی کیلئے اپنے متعلقہ محکمے کو درخواست دیںاور فاضل جج کوثرعباس زیدی نے واضح کیا کہ سیکیورٹی فراہمی کیلئے عدالت کوئی آرڈر پاس نہیں کرے گی اور مزید سماعت 18جولائی تک ملتوی کردی۔

ادھر ملزمان کے وکیل رضون عباسی نے نجی ٹی وی چینل کے رپورٹر کوخبردار کیا ہے کہ ممبئی حملہ کیس کی سماعت ان کیمرہ ہے ، آپ عدالتی کارروائی رپورٹ نہیں کرسکتے، اگر آپ نے خبر فائل کی تو آپ کیخلاف درخواست دیں گے۔

مزید : قومی


loading...