ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میچ میں آسٹریلیا کو شکست دے کر انگلینڈ چوتھی مرتبہ فائنل میں پہنچ گیا

ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میچ میں آسٹریلیا کو شکست دے کر انگلینڈ چوتھی مرتبہ ...
ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میچ میں آسٹریلیا کو شکست دے کر انگلینڈ چوتھی مرتبہ فائنل میں پہنچ گیا

  


برمنگھم (ڈیلی پاکستان آن لائن) آئی سی سی کرکٹ ورلڈکپ 2019کے دوسرے سیمی فائنل میںانگلینڈ آسٹریلیا کو 8وکٹوں سے شکست دے کر فائنل میں پہنچ گیا ۔فائنل میچ نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے درمیان کھیلا جائے گا اور ان دونوں میں سے کوئی بھی ٹیم جیت کر اپنا پہلا ورلڈ کپ اٹھائے گی۔

دوسرے سیمی فائنل میں آسٹریلیا نے 49اوورز میں تمام وکٹوں کے نقصان پر 223رنز بنائے جس کے جواب میں انگلینڈ نے2وکٹو ں کے نقصان پر 32.1اوورز میں مطلوبہ ہدف حاصل کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق ایجبسٹن برمنگھم میں کھیلے جا رہے میچ میں آسٹریلیا نے ٹاس جیت بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تو صرف 4 کے مجموعی سکور پر ہی کپتان ایرون فنچ کوئی سکور بنائے بغیر ہی جوفرا آرچر کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔ مجموعی سکور میں 6 رنز کے اضافے کے بعد ہی ڈیوڈ وارنر بھی 9 رنز بنا کر کرس ووکس کی گیند پر بیرسٹو کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔آسٹریلیا کی تیسری وکٹ 14 کے مجموعی سکور پر گری اور پیٹرہینڈزکومب بھی 4 رنز بنا کر کرس ووکس کی گیند پر کلین بولڈ ہو گئے۔ سابق کپتان سٹیو سمتھ اور ایلکس کیری نے چوتھی وکٹ کی شراکت میں 103 رنز جوڑے اور مجموعی سکور 117 تک پہنچا دیا تاہم اس موقع پر ایلکس کیری بھی 46 رنز بنا کر عادل راشد کی گیند پر جیمز وینس کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔ مجموعی سکور میں صرف ایک سکور کے اضافے کے بعد مارکوس سٹوئنس بھی بغیر کوئی سکور بنائے عادل راشد کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔آسٹریلیا کے سٹونٹیز بغیر کوئی رن بنائے آوٹ ہوئے جبکہ میکسول 22،کیومنز 6،سٹارک 29،بیرنڈوف 1اور سٹیون سمتھ 85سکور بنا کر آوٹ ہوئے ۔انگلینڈ کی جانب سے ووکس اور راشد نے 3,3جبکہ آرچر نے 2وکٹیں حاصل کیں ۔

ہدف کے تعاقب میں انگلینڈ کی طرف سے اننگز کا ا?غاز جیسن روئے اور جونی بیرسٹو نے کیا، دونوں جارحانہ بلے بازوں نے شروع میں محتاط انداز میں بیٹنگ کی تاہم بعد میں سکور کو تیزی سے ا?گے بڑھانا شروع کیا۔ اس دوران جیسن روئے نے کینگروز باو?لرز کی خوب دھنائی کی۔انگلینڈ کی پہلی وکٹ 124 رنز پر گری، جونی بیرسٹو 34 سکور بنا کر فاسٹ باو?لر مچل سٹارک کی گیند پر ایل بی ڈبییو ہو گئے۔ دوسرا نقصان جیسن روئے کی صورت میں اٹھانا پڑا جب بیٹسمین جارحانہ بیٹنگ کرتے ہوئے 65 گیندوں پر 85 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔ ان کی اس اننگز میں 9 چوکے اور پانچ چھکے شامل تھے۔ جوئے روٹ نے 49 سکور کی باری کھیلی، مورگن نے 40 رنز بنائے۔ سٹارک اور کمنز نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

انگلینڈ اس سے قبل 1979، 1987، 1992 کے فائنل کھیل چکا ہے تاہم ہر بار فیصلہ کن مرحلے میں ناکام رہا۔ کیویز اور کرکٹ کے بانی ملک کی ٹیمیں پہلی مرتبہ ٹائٹل کے حصول کیلئے 14 جولائی کو ٹکرائیں گی۔

مزید : کھیل