نابالغ طالبہ کے ساتھ اوباشوں کی کار میں اجتماعی زیادتی، موقع پر بچی کا والد بھی پہنچ گیا اور پھر ۔۔۔

نابالغ طالبہ کے ساتھ اوباشوں کی کار میں اجتماعی زیادتی، موقع پر بچی کا والد ...
نابالغ طالبہ کے ساتھ اوباشوں کی کار میں اجتماعی زیادتی، موقع پر بچی کا والد بھی پہنچ گیا اور پھر ۔۔۔

  


رانچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست جھاڑ کھنڈ میں 4 اوباشوں نے ساتویں جماعت کی طالبہ کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ ملزمان نے بچی کو اپنی کار میں ہوس کا نشانہ بنایا تو موقع پر اس کا والد بھی آگیا جس نے کار کا شیشہ توڑ کر بیٹی کو بچایا اور کافی تگ و دو کے بعد 2 ملزمان کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا۔

صاحب گنج میں بند روا ٹولی کے قریب صبح 10 بجے 4 ملزمان نے ساتویں جماعت کی نابالغ طالبہ کو پکڑ کر اپنی کار میں بٹھالیا۔ چاروں ملزمان نے بچی کے ساتھ زیادتی کی ۔ اس دوران لڑکی کا والد بھی موقع پر پہنچ گیا جس نے کار کا شیشہ توڑ کر اپنی بیٹی کو گاڑی سے باہر نکالا ، اس دوران ملزمان اور بچی کے والد کے مابین لڑائی بھی ہوئی جس میں متاثرہ کا باپ لہو لہان ہوگیا۔

لڑکی کے والد نے چار لوگوں کے سامنے ہتھیار ڈالنے سے انکار کردیا اور اس وقت تک ان کے ساتھ لڑتا رہا جب تک پولیس نہیں آگئی۔ اس دوران اس نے 2 ملزمان کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا جبکہ دیگر 2 ملزمان موقع سے فرار ہوگئے۔ پولیس نے متاثرہ لڑکی اور اس کے والد کے بیانات کی روشنی میں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے گرفتار ملزمان کو جیل منتقل کردیا ہے جبکہ دیگر 2 ملزمان کی تلاش جاری ہے۔

مزید : جرم و انصاف