مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی پر تشد دکارروائیاں جاری، گھر گھر تلاشی، توڑ پھوڑ متعدد نوجوان گرفتار

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی پر تشد دکارروائیاں جاری، گھر گھر تلاشی، توڑ ...

  

سرینگر (این این آئی)مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے پورے مقبوضہ علاقے میں بڑے پیمانے پر محاصرے اور تلاشی کی کاروائیاں جاری رکھیں اور رہائشیوں کو تشددکا نشانہ بنایا اور ہراساں کیا۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق فوجیوں نے سرینگر، بڈگام، گاندربل، کپواڑہ، بانڈی پورہ، بارہمولہ، شوپیاں، پلوامہ، اسلام آباد، کولگام، پونچھ، کشتواڑ، ڈوڈہ، رام بن اور راجوری کے مختلف علاقوں میں اپنی پرتشدد کارروائیاں کیں۔مکینوں نے میڈیا کو بتایا کہ بھارتی فورسز کے اہلکار گھروں میں زبردستی گھس کرہراساں کرتے ہیں اور گھریلو سامان کی توڑ پھوڑ کرتے ہیں۔ فوجیوں نے مختلف علاقوں سے متعدد نوجوانوں کو بھی گرفتارکرلیا ہے۔کشمیر میڈیاسروس کی طرف سے جاری تجزیاتی رپورٹ میں کہا گیا کہ بھارتی فوجی اور پولیس اہلکار کشمیریوں کی تحریک آزادی کو کمزور کرنے اور لوگوں میں خوف و دہشت کا احساس پیدا کرنے کیلئے مقبوضہ علاقے میں معصوم بچوں کو بھی نہیں بخش رہے ہیں۔ مقبوضہ کشمیرمیں پر امن مظاہرین پر بھارتی فورسز کے اہلکاروں کی طرف سے پیلٹ گنز کی فائرنگ کے باعث اٹھارہ ماہ کی کم سن بچی حبہ جان سمیت سینکڑوں بچے بصارت سے محروم ہو چکے ہیں۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ فوجیوں نے حال ہی میں کپواڑہ کے علاقے ہندواڑہ میں ایک معذور لڑکے کوعسکریت پسند قراردیتے ہوئے قتل کردیا۔بھارتی پولیس نے جمعہ کو ایک بار پھر سینئر صحافی اور نیوز پورٹل‘کشمیر والا’کے ایڈیٹر فہد شاہ کورواں سال مئی میں سرینگر میں تلاشی اور محاصرے کی ایک کارروائی کی کوریج کے سلسلے میں طلب کیا۔ کشمیر والا نے 19 مئی کو سرینگر کے علاقے نوا کدل میں فوجی کارروائی کے بارے میں خصوصی رپورٹ جاری کی تھی جس میں بھارتی فوجیوں نے معروف مجاہد کمانڈر جنیدا صحرائی کو انکے ساتھی سمیت شہید اور کم سے کم 19 مکانوں کو تباہ کردیا تھا۔

بھارتی فوج کا آپریشن

مزید :

صفحہ اول -