ایکسپوسنٹر کو رونا فیلڈ ہسپتال میں کوئی فضول خرچی نہیں کی گئی: یاسمین راشد

  ایکسپوسنٹر کو رونا فیلڈ ہسپتال میں کوئی فضول خرچی نہیں کی گئی: یاسمین راشد

  

لاہور (جنرل رپورٹر)وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہاہے کہ ایکسپو سنٹر کی عمارت کرائے پر نہیں بلکہ لاک ڈاؤن کے باعث ملکی مفاد میں استعمال میں لائی جا رہی ہے۔ صوبائی وزیر صحت نے ایکسپو سنٹر فیلڈ ہسپتال لاہور کے حوالے سے میڈیا پر چلنے والی خبروں کی بھرپور انداز میں تردید کرتے ہوئے کہاکہ کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے امتناع وبائی امراض آرڈیننس 2020کے تحت لاہور ایکسپوسنٹر میں بنائے جانے والے فیلڈ ہسپتال پر حکومت پنجاب کی جانب سے نہ تو کوئی فضول خرچی کی گئی اور نہ ہی کرایہ کی مد میں کوئی رقم واجب الادا ہے۔وزیرصحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہاکہ کورونا وباء کو انٹرنیشنل ہیلتھ ایمرجنسی قرار دینے کے بعد مریضوں کی سہولت کی خاطر حکومت پنجاب نے قرنطینہ سنٹرز اور فیلڈ ہسپتالوں کا آغاز کیا۔تاہم ایکسپوسنٹر میں پنجاب کا سب سے بڑا کورونا فیلڈ ہسپتال قائم کیاگیا۔ تمام پروکیورمنٹ کا عمل شفاف اور قانونی طریقہ کار کے ساتھ مکمل کیاگیا۔مارچ میں لاک ڈاؤن کے باعث تمام تقریبات پر پابندی عائد کی گئی اورشادی ہالز سمیت ایکسپوسنٹر کو بھی ہر قسم کی تقریبات کیلئے مکمل بندکردیاگیا۔صوبائی وزیر صحت نے مزیدکہاکہ ضلعی انتظامیہ نے حکومت کے فیصلے کے مطابق ایکسپوسنٹر کی عمارت کو ہنگامی بنیادوں پر فیلڈ ہسپتال میں منتقل کیا۔10اپریل 2020کو ڈپٹی کمشنر لاہور کی زیرصدارت ایکسپوسنٹر انتظامیہ کے ہمراہ میٹنگ ہوئی۔میٹنگ میں طے ہوا کہ ایکسپوسنٹر میں قائم عارضی فیلڈ ہسپتال کے بجلی اور گیس کے بلوں کی ادائیگی محکمہ سپیشلائیزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن کرے گا۔بل غلط فہمی سے سامنے آیا جس کے بعد ایکسپوسنٹر بارے غلط فہمی دور کرنے کیلئے میٹنگ کے تمام مندرجات وفاقی حکومت کو بھیج دیئے گئے ہیں۔

یاسمین راشد

لاہور(آئی این پی) بھارت میں پھنسے مزید 75 پاکستانی اٹاری واہگہ بارڈر کے ذریعے وطن واپس پہنچ گئے۔ پاکستانی ہائی کمیشن نئی دہلی کے مطابق بھارت میں پھنسے مزید 75 پاکستانیوں کو وطن واپس منتقل کر دیا گیا ہے اور ان پاکستانیوں کی واپسی وزارت خارجہ، داخلہ سمیت متعلقہ اداروں کی کوششوں سے ممکن ہوئی۔ ہائی کمیشن کا کہنا ہے کہ کورونا کے باعث واہگہ اور اٹاری بارڈر بند ہونے سے یہ پاکستانی بھارت کے مختلف شہروں میں پھنس گئے تھے۔ ہائی کمیشن کے مطابق 20 مارچ سے اب تک 500 پاکستانیوں کو بھارت سے واپس وطن منتقل کیا جا چکا ہے جب کہ بھارت میں پھنسے باقی پاکستانی شہریوں کی جلد وطن واپسی کے لیے بھی کوششیں جاری ہیں۔

پاکستانیوں کی واپسی

مزید :

صفحہ آخر -