کاش اسلامی برادری کے پاس ایک نہیں زیادہ طیب اردگان ہوتے،شکیل اعوان

کاش اسلامی برادری کے پاس ایک نہیں زیادہ طیب اردگان ہوتے،شکیل اعوان

  

لاہور(پ ر)انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی نائب صدر ملک شکیل اعوان نے کہا ہے کہ کشمیریوں اور فلسطینیوں کیلئے مسلمان حکمرانوں کی چشم پوشی سے بڑاکوئی دکھ نہیں ہوسکتا،کاش اسلامی برادری کے پاس ایک نہیں تین چاررجب طیب اروان ہوتے۔ بھارت کاکشمیریوں،اسرائیل کافلسطینیوں اور برما کا روہنگیامسلمانوں پربدترین ظلم وتشد دتوسمجھ میں آتا ہے مگر غمزدہ خاندانوں کیلئے مسلمان حکمرانوں کی بے بسی اور بے حسی ایک بڑاسوالیہ نشان ہے۔

،وہ کس کے ڈرسے بزدل بنے بیٹھے ہیں۔مسلمان ملکوں کے پاس معدنیات اوروسائل کی فراوانی ہے،کاش مخلص قیادت بھی میسر ہوتی توآج فلسطین اورکشمیر کے درودیوارسے معصوم بچوں سمیت بیگناہ مسلمانوں کالہو نہ ٹپک رہا ہوتا۔اپنے ایک بیان میں ملک شکیل اعوان نے مزید کہا کہ مسلمان ہمیشہ اللہ تعالیٰ کی ذات اوراس کی غیبی امدادپر کامل یقین کے بل بوتے پر بڑے بڑے دشمنوں کوپچھاڑتے رہے ہیں،آج بدقسمتی سے ہماراایمان اورایقان کمزورپڑگیا۔ افسوس اپنے آرام اور عیش وعشرت پرپانی کی طرح پیسہ بہانے والے عرب حکمرانوں نے اہل غزہ کواسرائیلی درندوں اورشیطانوں کے رحم وکرم پرچھوڑدیاجوانہیں بھنبھوڑتے رہے

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -