وزیرستان میں ٹارگٹ کلنگ کے کیسز میں اضافہ ہورہا ہے،سردار حسین بابک

وزیرستان میں ٹارگٹ کلنگ کے کیسز میں اضافہ ہورہا ہے،سردار حسین بابک

  

پشاور(نیوز رپورٹر)ڈپٹی سپیکر محمود جان کی صدارت میں صوبائی اسمبلی کے اجلاس کی کاروائی کا آغاز تلاوت کلام پاک سے شروع وزیرستان میں ٹارگٹ کلنگ کے کیسیز میں اضافہ ہورہا ہے. وزیر قانون اس حوالے سے جواب دیں.میر کلام وزیرایک ضلع میں ایک ڈی ایس پی جو عرصہ دراز سے تعینات ہے, وہ اسکی قابلیت اور علاقے کی نزاکت کے حساب سے کام کررہے ہوتے ہیں. انکی کسی غلطی کی نشاندہی ایوان میں نہیں کی گئی.بعض علاقوں میں کچھ ڈی ایس پی جضرات 2015 سے بیٹھے ہوے ہیں. سیکرٹری, ڈی پی او کو پانچ مہینے بھی ایک جگہ ٹکنے نہی دیتے. یہ گڈ گورننس کی پالیسی کے خلاف ہے.سردار بابک صلاح الدین خان کے سوال پر جواب وزیر قانون سلطان خان بعض علاقوں میں کچھ ڈی ایس پی جضرات 2015 سے بیٹھے ہوے ہیں. سیکرٹری, ڈی پی او کو پانچ مہینے بھی ایک جگہ ٹکنے نہی دیتے. یہ گڈ گورننس کی پالیسی کے خلاف ہے.سردار بابک لسٹ میں دکھاے گیے چار ڈی ایس پی صاحبان لاڈلے ہیں جن کا ٹرانسفر ہی نہی ہوتا. صلاح الدین صلاح الدین خان کے سوال 6203 کو کمیٹی کو ریفر کردیا گیا. ڈپٹی سپیکرصلاح الدین خان کے سوال 6203 کو کمیٹی کو ریفر کردیا گیا. ڈپٹی سپیکرکمیٹیاں موجود ہی نہی تو ریفر کس کو کیا ہے؟ ثوبیہ شاہدتوجہ دلاو نوٹس سردار بابک صوابی بونیر روڈ کی حالت. سیکرٹری سی اینڈ ڈبلیو دو دنوں میں تخمینہ لگا کر اس مسلے کو جلد ختم کریں. اکبر ایوب خانصوبے میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ غیر اعلانیہ ہورہی ہے. کم وولٹیج کی وجہ سے لوگوں کے قیمتی آلات و سامان تباہ ہوگیا.ہمارا صوبہ بجلی پیدا کررہا ہے مگر بدلے میں نہ انکے بوسیدہ ٹرانسمیشن لاینز ٹھیک ہوتی ہیں نا پوری بجلی ملتی ہے. ماضی میں ہم مرکزی حکومت کو پریشرایز کرتے اس مسلے پر مگر موجودہ حالات میں جہاں صوبے اور مرکز میں ایک ہی پارٹی کی حکومت ہے مگر بدقسمتی سے یہاں کی حکومت مرکز کے ساتھ صوبے کے حقوق کی بات نہی کرتی.سردار بابکبجلی کی قیمت میں ناجایز اضافہ. ایک روپے یونٹ پیدا کرنے والے صوبے کو مہنگی ترین بجلی مل رہی ہے. سردار بابک96 منتخب ممبران میں پی ٹی آئی کے پاس ترجمان نہی کہ غیر منتخب شخص کو ترجمان بنایا. سردار بابکہم نے بجٹ اجلاس میں صوبے کی روایات کا پاس رکھا اور باقی صوبوں کی نسبت حکومت سے تعاون کیا. اسکا کریڈٹ اپوزیشن کو جاتا ہے. سردار بابک بل کمیٹی میں جاتا ہے وہ بحث کے بعد منظوری کے لیے اسمبلی اتا ہے مگر اس قانون پر عمل درامد نہی ہورہا. قومی اسمبلی میں بھی یہی پریکٹس ہے.مولانا لطف الرحمانبل کمیٹی میں جاتا ہے وہ بحث کے بعد منظوری کے لیے اسمبلی اتا ہے مگر اس قانون پر عمل درامد نہی ہورہا. قومی اسمبلی میں بھی یہی پریکٹس ہے.مولانا لطف الرحمان

مزید :

پشاورصفحہ آخر -