بہاولپور میں سیکرٹریٹ کا قیام مسترد، ہر لحاظ سے ملتان ہونا چاہئے، سیاسی رہنماؤن کا ردعمل

بہاولپور میں سیکرٹریٹ کا قیام مسترد، ہر لحاظ سے ملتان ہونا چاہئے، سیاسی ...

  

ملتان (فورم رپورٹ ) بہاولپور میں ایسا انفراسٹرکچر موجود نہیں کہ جنوبی پنجاب کا دارالحکومت بن سکے، عوام کو سہولتیں دینے کیلئے اگر جنوبی پنجاب کا سیکرٹریٹ بنایا جارہا ہے تو پھر بہترین آپشن صرف ملتان ہے، بہاولپور علیحدہ کنارہ پر واقع ہے لوگ بسیں بدل بدل کر بہاولپور(بقیہ نمبر42صفحہ7پر)

پہنچیں گے، سیکرٹریٹ کا فیصلہ تبدیل نہ ہوا تو تحریک انصاف کا حال بھی باقی جماعتوں سے مختلف نہ ہوگا، عوام بہاولپور سیکرٹریٹ کو مسترد کرچکے ہیں ، جنوبی پنجاب نام منظور نہیں سرائیکی صوبہ یا پھر ملتان صوبہ چاہیئے، سیکرٹریٹ کے حوالیسے شاہ محمود قریشی کے خلاف پروپیگنڈہ کیا جارہا ہے، کارکن شاہ محمود قریشی کے ساتھ ہیں ، عوام اپنے حق کیلئے اْٹھ کھڑے ہوئے ہیں، حکومت نے مسلم لیگ (ق) کے ساتھ اپنے اتحاد کو برقرار رکھنے کیلئے بہاولپور میں سیکرٹریٹ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے، تحریک انصاف نے جنوبی پنجاب میں علیحدہ سیکرٹریٹ قائم کرکے اپنا وعدہ پورا کیا ہے، جنوبی پنجاب میں ترقی کا دور شروع ہونے والا ہے ، حکومت فوری طور پر سیکرٹریٹ ملتان میں بنانے کا اعلان کرے ورنہ اولیاء کرام کے شہر سے نا انصافی کرنے والے جلد انجام کو پہنچ جائیں گے، جنوبی پنجاب صوبہ صرف پیپلز پارٹی ہی بنائے گی، ان ملے جلے ردعمل کا اظہار مختلف سیاسی و سماجی شخصیات نے روزنامہ "پاکستان" کے زیراہتمام فورم بعنوان ; جنوبی پنجاب کیلئے علیحدہ سیکرٹریٹ بہاولپور کو بنایا گیا ہے، کیا حکومت کا یہ فیصلہ درست ہے ؟ کے حوالیسے اپنے اپنے خیالات کا اضہار کیاکیپٹن (ر) ناصر علی مہے سابقہ صوبائی ٹکٹ ہولڈر تحریک انصاف ملتان نے کہا حکومت نے بہاولپور میں سیکرٹریٹ بناکر شدید غلطی کی ہے، حکومتی فیصلہ کو عوام مسترد کرچکے ہیں، جنوبی پنجاب میں رہنے والوں کو تقسیم کرنے کی سازش ہے، ملتان نے تحریک انصاف کو بھاری مینڈیٹ دیا جس کا جواب حکومت یہ ناانصافی کرکے دی رہی ہے، شاہ محمود قریشی، عامر ڈوگر اور ان کی پوری ٹیم کو دھرتی کیلئے کچھ کرنے کی ضرورت ہے، ہم ہر فورم پر اس ناانصافی کے خلاف آواز اْٹھائیں گے تاکہ ہم اپنی آنے والی نسل کو بتاسکیں کہ ہم نے اپنی دھرتی کے حق کیلئے بھرپور جدوجہد کی- رانا تصویر احمد چیئرمین تحریک صوبہ ملتان نے کہا کہ ملتان کو ہزاروں سال سے مرکزی حثیت حاصل ہے، موجودہ بہاولپور میں کسی بھی قسم کا انفراسٹرکچر سے سے موجود ہی نہیں ہے جس سے صوبہ کا دارالحکومت بن سکتا ہے انہوں نے کہا کہ آبادی اور وسائل کے موازنہ کے حساب سے بھی بہت فرق ہے- راؤ مظہر الاسلام سابقہ چیئرمین واْمیدوار صوبائی اسمبلی نے کہا حکومت کا بہاولپور سیکرٹریٹ بنانا غیر مناسب، غیر منصفانہ اور غیر دانشمندانہ اقدام ہے، بہاولپور کو ملتان کی طرح ترقی یافتہ بننے میں پچاس سال لگیں گے، ملتان میں جنوبی پنجاب کی سب سے بڑی غلہ منڈی، سبزی منڈی، انٹرنیشنل ایئرپورٹ، پاکستان کا سب سے بڑا ریلوے ڈویڑن، میڈیکل یونیورسٹی، میڈیکل کالج اور سرکاری و غیر سرکاری درجنوں یونیورسٹیاں بھی موجود ہیں، میٹر بس سروس، کسٹم ہیڈ کوارٹر، کسٹم ہیڈ کوارٹر، میپکو ہیڈ کوارٹر، انڈسٹریل اسٹیٹ ، اسٹیٹ بنک، ڈرائی پورٹ، انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم ، موٹر وے ، تھری سٹار ، فور سٹار، فائیو سٹار ہوٹل بھی ملتان میں موجود ہیں، فوری طور پر سیکرٹریٹ ملتان میں بنانے کا اعلان کیا جائے ورنہ اولیاء کرام کے شہر سے ناانصافی کرنے والے جلد انجام کو پہنچ جائیں گے- سید فضل عباس ماہر تعلیم، معروف سیاسی، سماجی و معاشی تجزیہ نگار نے کہا کہ جنوبی پنجاب کا سیکرٹریٹ بہاولپور ہو کسی لحاظ سے اچھا فیصلہ نہیں ہے، بہاولپور سائیڈ لائن پر واقع ہے، ملتان جنوبی پنجاب کے مرکز موٹر وے، جی ٹی روڑز پر واقع ہے، جن اضلاع کے لوگوں نے سیکرٹریٹ آنا ہے آسانی کے ساتھ ملتان پہنچ سکتے ہیں، بہاولپور جانے کیلئے تین تین بسیں بدل کر جانا ہوگا، عوام کو سہولتیں دینے کیلئے اگر جنوبی پنجاب کا سیکرٹریٹ بنایا جارہا تو پھر بہترین آپشن صرف ملتان ہے - قربان فاطمہ جنرل سیکرٹری جنوبی پنجاب خواتین ونگ تحریک انصاف نے کہا کہ جتنی کوشش شاہ محمود قریشی نے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ بننے کیلئے کی ہیں اتنی اور کسی نے نہیں کیں، مخالف جماعتیں اور لوگ شاہ محمود قریشی کی مخالفت اور پروپیگنڈہ کررہیہیں، حقائق تو یہ ہیں کہ جنوبی پنجاب کو علیحدہ سیکرٹریٹ دینے کا وعدہ تحریک انصاف نے پورا کردیا ہے، جس پر ہم کارکنان اپنے وزیراعظم عمران خان ، وزیراعلی عثمان بزدار اور وفاقی وزیر شاہ محمود قریشی کے مشکور ہیں، انہوں نے کہا کہ ملتان جنوبی پنجاب کا سنٹر ہے ہماری حکومت کو چاہیئے کہ سیکرٹریٹ ملتان ہی کو بنائیں یہاں تمام سہولتیں موجود ہیں - ملک حامد بچہ معروف سیاسی و سماجی شخصیت نے کہا کہ جنوبی پنجاب کیلئے بہاولپور سیکرٹریٹ بننا ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے باقی تمام اضلاع کے ساتھ زیادتی ہے، جن اضلاع کا لنک ہی نہیں بنتا بہاولپور کے ساتھ پھر تو ان اضلاع کیلئے لاہور ہی ٹھیک ہے، ملتان مرکزی شہر ہے، تمام سہولتیں موجود ہیں، عوام جاگ گئے ہیں اب اپنا حق لیکر رہیں گے انشاء اللہ - سید ریاض حسین بخاری رہنما پاکستان پیپلز پارٹی ملتان نے کہا کہ ہم بہاولپور سیکرٹریٹ کو مسترد کرتے ہیں، حکومت نے صرف مسلم لیگ (ق) کے ساتھ اپنے اتحاد کو برقرار رکھنے کیلئے یہ فیصلہ کیا ہے، حکومت کو یہ فیصلہ واپس لینا ہوگا، ملتان جنوبی پنجاب کا مرکزی شہر ہے، اس وقت قومی اسمبلی، صوبائی اسمبلی اور سینٹ میں بیٹھے اس خطے کے پارلیمنٹرین کو اس ناانصافی کے خلاف آواز بلند کرنا ہوگی ان کی خاموشی معنہ خیز ہے - شیخ ساجد سہیل سابقہ ناظم و رہنما پاکستان تحریک انصاف ملتان نے کہا کہ تحریک انصاف نے اپنا وعدہ پورا کرتے ہوئے جنوبی پنجاب کا علیحدہ سیکرٹریٹ قائم کردیا ہے، کچھ نادان لوگ شاہ محمود کی اس مخلص کاوش کی مخالفت کرکے اپنا سیاسی قد بڑھانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں حقائق یہ ہیں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام میں شاہ محمود قریشی کا بہت بڑا کردار ہے، ہم بہاولپور سیکرٹریٹ کو نامنظور کرتے ہیں، سیکرٹریٹ ملتان ہی کو ہونا چاہیئے - سجاد خان بلوچ رہنما پاکستان پیپلز پارٹی نے کہا کہ تحریک انصاف نے سیکرٹریٹ کا لولی پوپ دیا ہے، یہ لوگ جنوبی پنجاب کی عوام سے مخلص نہیں ہیں ، جنوبی پنجاب کو علیحدہ صوبہ صرف اور صرف پیپلز پارٹی ہی بنائے گی ، عوام گواہ ہیں سید یوسف رضا گیلانی نے بطور وزیراعظم ، بطور سپیکر قومی اسمبلی، بطور وفاقی وزیر ہمیشہ ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے ہر شہر و تحصیلوں میں بلاتفریق ترقیاتی کام کرائے، اب بھی صوبہ صرف پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں ہی بنے گا -

فورم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -