وہاڑی:سی ای او ہیلتھ کی عدم تعیناتی سے معاملات شدید متاثر

وہاڑی:سی ای او ہیلتھ کی عدم تعیناتی سے معاملات شدید متاثر

  

وہاڑی (بیورورپورٹ،نامہ نگار )چیف ایگزیکٹوآفیسرہیلتھ اتھارٹی کاتبادلہ ہوئے ایک ماہ سے زیادہ عرصہ گذرچکاہے قائمقام سی ای اوہیلتھ پردوہری ذمہ داریوں کی وجہ (بقیہ نمبر22صفحہ6پر)

سے روزمرہ کے کام متاثرہونے لگے۔عوامی وسماجی راہنماؤں کامستقل سی ای اوہیلتھ تعینات کرنے کامطالبہ۔تفصیل کے مطابق سی ای اوہیلتھ ڈاکٹرارشدملک کے ملتان تبادلہ کوایک ماہ سیزیادہ عرصہ گذرچکاہے حکومت پنجاب نے ایم ایس ڈی ایچ کیوہسپتال ڈاکٹرحافظ محمدفاضل کوعارضی چارج دے کرسی ای اوکی اضافی ذمہ داریاں بھی دے دی ہیں دوہری ذمہ داریوں کی وجہ سے ضلع کی سطح پرمحکمہ صحت اورڈی ایچ کیوہسپتال میں کام متاثرہورہاہے ڈاکٹرحافظ محمدفاضل اگرسی ای اوکی ذمہ داریاں نبھاتے ہیں توڈی ایچ کیوہسپتال میں ان کے نہ بیٹھنے کی وجہ سے کام رک جاتے ہیں اوراگربطورایم ایس ڈی ایچ کیوہسپتال کی ذمہ داریاں پوری کرتے ہیں توسی ای اوکی ذمہ داریاں پوری کرنے میں رکاوٹ کھڑی ہوجاتی ہیں صدرمرکزی انجمن تاجران ارشادحسین بھٹی،جنرل سیکرٹری راؤ خلیل احمد،صدرکیمسٹ ایسوسی ایشن کاشف منورقریشی،صدرڈسٹرکٹ بارمیاں شہزادانجم مترو،ضلعی راہنماگھی ڈیلرایسوسی ایشن مختاراحمدبھٹی،صدرمرکزی انجمن تاجران میلسی شیخ محمدسلیم،صدرمرکزی انجمن تاجران بوریوالہ محمدجمیل بھٹی،ضلعی چیرمین پرائیویٹ سکولزایسوسی ایشن میاں جہانزیب یوسف ودیگرنے وزیراعلی پنجاب،وزیرصحت پنجاب اورسیکرٹری ہیلتھ پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ فوری طورپروہاڑی میں چیف ایگزیکٹو آفیسرہیلتھ اتھارٹی تعینات کیاجائے تاکہ ان کی عدم موجودگی کی وجہ سے عوام کوجن مسائل کاسامناہے ان کاخاتمہ ممکن ہوسکے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -