6 کروڑ کا فراڈ‘ ضمانتیں خارج ہونے پر پانچوں ملازمین احاطہ عدالت سے گرفتار

  6 کروڑ کا فراڈ‘ ضمانتیں خارج ہونے پر پانچوں ملازمین احاطہ عدالت سے گرفتار

  

ملتان (خصو صی رپورٹر )ہائیکورٹ ملتان بنچ نے صارفین کے ساتھ 6 کروڑ کا فراڈ کرنے والے مائیکرو فنانس بینک کے پانچ ملازمین کی عبوری ضمانتیں خارج کرنے کا حکم دیا ہے جنہیں پولیس تھانہ سٹی شجاع آباد نے (بقیہ نمبر12صفحہ6پر)

موقع سے گرفتار کرلیا اور گزشتہ روز جوڈیشل مجسٹریٹ نے ملزمان کا پانچ روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرنے کا حکم دیا ہے۔ فاضل عدالت میں بینک افسران و ملزمان کامران حنیف، محمد آصف، مبشیر حسن، عمران مشتاق اور طارق محمود نے درخواست ضمانت قبل از گرفتاری دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ ان کے خلاف بینک کے ایریا منیجر سہیل احمد نے 5 مارچ کو مقدمہ درج کرایا جس میں الزام عائد کیا گیا کہ ملزمان نے 25 لوگوں سے فراڈ کیا اور انکے جعلی دستخط کرکے بینک اکاؤنٹ میں رقم جمع کرانے کے بہانے کروڑوں کا فراڈ کیا تھا۔ ملزمان دوران تفتیش اور گواہوں کے بیانات کے مطابق قصور وار پاگئے جن کی سیشن عدالت شجاع آباد نے بھی عبوری ضمانت خارج کردی تھی تاہم ہائیکورٹ نے بھی ضمانت خارج کی تو ملزمان کو احاطہ عدالت سے ہی گرفتار کرلیا گیا جن کا گزشتہ روز علاقہ مجسٹریٹ نے 5 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا ہے۔مدعی کی جانب سے ایڈووکیٹ رانا آصف سعید اور مہر ارشاد احمد آرائیں نے عدالت میں دلائل پیش کیے تھے۔

گرفتار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -