"میری جماعت تو مجھے کراچی کا نمائندہ نہیں گردانتی، میں پہلی بار اپنے کپتان سے التماس کرتا ہوں کہ ۔ ۔ ۔" عامر لیاقت حسین کا صبر جواب دینے لگا

"میری جماعت تو مجھے کراچی کا نمائندہ نہیں گردانتی، میں پہلی بار اپنے کپتان سے ...

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عامر لیاقت حسین کا صبر بھی جواب دینے لگا کہتے ہیں انہیں تو ان کی اپنی جماعت ہی کراچی کا نمائندہ نہیں سمجھتی۔

عامر لیاقت حسین نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر شکووں کے انبار لگادیے اور عمران خان سے اپیل بھی کردی۔ اپنے سلسلہ وار ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ "میری جماعت تو مجھے کراچی کا نمائندنہیں گردانتی، کوئی بات نہیں ،عمران خان تب بھی میرا لیڈر ہے اور رہے گا، میرے لیے کافی ہہے کہ مجھ سے اہلیان وطن محبت کرتے ہیں اور میں کسی کرپٹ لیڈر کے ساتھ نہیں ،البتہ کے الیکٹرک کے معاملے پر میں پہلی باراپنے کہتان سے ملتمس ہوں مجھے آن بورڈلیاجائے"

عامر لیاقت کامزید کہنا تھا  کہ "کراچی کے نمائندوں چلل٘اتے رہو قومی اسمبلی میں! مجھے چلا٘تے دیکھا؟ کیونکہ میں جانتا تھا کہ کے الیکٹرک کے معاملے پر بدتمیز عمر ایوب “چ” سے چراغ جلاتا رہے گا!کے الیکٹرک بورڈ میں پی ٹی ائی اور ایم کیو ایم کے نمائندے کیوں نہیں، نیپرا کھلی کچہریاں لگانے کے بجائے اس کا جواب دے؟"

انہوں نے گورنر عمران اسماعیل اور اسد عمر کی 'بے بسی' پر بھی بات کی کہ"میرےبعد سب نےاس طرح شور مچایا کہ جیسے جلنے والی جھونپڑیوں کے رہائشیوں کو لیز مل رہی ہو اور جن کی جھونپڑیاں بھی نہیں تھیں وہ بھی آگئے!! گورنر صاحب اور اسد عمر بھائی کیا کر سکتے ہیں؟ بے چاروں کو میگا واٹ ، فرنس آئل اور وسائل کی تقسیم میں مونس الجھا دے گا"

عامر لیاقت نے مدعا بیان کرتے ہوئے کہا کہ "بنیادی بات کی جائے بس ایک بات عوام نے خان صاحب پر اعتماد کیا وہ ہم سے مسائل کا حل چاہتے ہئں اور حل یہ نہیں کہ ملبہ پچھلوں پر ڈال دیں بلکہ حل ایک ہی ہے کراچی والوں کو لٹکتے تاروں سے قتل کرنے کے جرم میں کے اکیکٹرک سے معاہدہ منسوخ کر کے اسے دوبارہ کے ای ایس سی میں تبدیل کیا جائے"

عامر لیاقت نے کہا کہ "جیسے ہی محکمہ موسمیات نے کل اطلاع دی کہ بارش برسانے والے بادل اب کراچی کے بجائے بلوچستان کا رخ کر گئے ہیں تو کتے کی دم کی طرح ٹیڑھی کے الیکٹرک نہ جانے کیسے سیدھی ہوگئی؟ صاف مطلب! بجلی تھی قوم ثمود کی اس باقیات کے پاس ! بارش کے بہانے انتظار میں اوور بلنگ کی تیاریاں تھیں"

خیال رہے کراچی میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ اور کے الیکٹرک کی جانب سے اووربلنگ کی شکایات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جس کی وجہ سے کراچی کے عوام ذہنی اذیت کا شکار ہیں۔

مزید :

قومی -