"وزیراعظم کی ہدایت پرمعائنہ ٹیم نےحکومتی خریداری کی انسپکشن کی اور نتیجہ یہ نکلا کہ ۔ ۔۔" کمیشن کے چیئرمین احمد یار ہراج نے تہلکہ خیز انکشاف کردیا

"وزیراعظم کی ہدایت پرمعائنہ ٹیم نےحکومتی خریداری کی انسپکشن کی اور نتیجہ یہ ...

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیراعظم معائنہ کمیشن کے چیئرمین  احمد یار ہراج نے بتایا ہے کہ  وزیراعظم کی ہدایت پرمعائنہ ٹیم نےحکومتی خریداری کی انسپکشن کی اور یہ نتیجہ نکلا کہ نجی شعبےکی نسبت حکومتی خریداری مہنگی ہے۔

وزیراطلاعات شبلی فراز کیساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین وزیراعظم معائنہ کمیشن احمد یار ہراج نے بتایا کہ   پہلی منتخب حکومت ہےجس نےاس معاملے پرہاتھ ڈالا،  تمام حکومتی محکموں میں بہتری کی گنجائش ہے،  حکومتی ادائیگیوں کےنظام میں نقائص ہیں،بہتری ناگزیرہے۔

 اس موقع پر شبلی فراز کاکہناتھاکہ  اپوزیشن کادوبارہ آنےکاکوئی امکان نہیں،  تحریک انصاف کی حکومت ان کونہیں چھوڑےگی،  حکومت اپنےمنشورکےمطابق ترجیحات کاتعین کرتی ہے، اداروں میں اصلاحات پی ٹی آئی منشور میں شامل ہے، وزیراعظم نےمنشورکی پاسداری کرتےہوئےمختلف اقدامات کیے۔انہوں نے کہاکہ   ہمیشہ اداروں میں اصلاحات کی بات کی،بدقسمتی سےاداروں کودانستہ طورپرمفلوج کیاگیا، اداروں میں شفافیت اوراستحکام حکومت کیلئے بڑا ٹاسک تھا،  بدقسمتی سے ماضی میں ملکی اداروں کو تباہ کیا گیا، حکومتی خریداریوں کی مد میں گزشتہ 10 سال میں 4 کھرب زیادہ خرچ ہوئے،کوئی بھی حکومت 20 ماہ میں اصلاحات نہیں لاسکتی۔

شبلی فراز کاہناتھاکہ  ماضی میں حکومتیں کرپشن میں ملوث رہیں، کرپشن کی وجہ سےعوامی فنڈزکےضیاع پرتوجہ نہیں دی گئی،  وزیراعظم کی ذات کو نشانہ بنانا اپوزیشن کا اصل مقصد ہے،  اپوزیشن کو ڈر ہے حکومت اصلاحات میں کامیاب ہوگئی تو سب جیل میں ہوں گے،  اپوزیشن کااکٹھاہونےکامقصدعمران خان پردباؤڈالناہے،  وزیراعظم عمران خان کسی دباؤمیں نہیں آئیں گے۔

مزید :

قومی -