انڈیا میں پابندی ، ٹک ٹاک کمپنی اپنا ہیڈ کوارٹر چین سے باہر منتقل کرنے کا منصوبہ بنانے لگی، بڑا دعویٰ

انڈیا میں پابندی ، ٹک ٹاک کمپنی اپنا ہیڈ کوارٹر چین سے باہر منتقل کرنے کا ...
انڈیا میں پابندی ، ٹک ٹاک کمپنی اپنا ہیڈ کوارٹر چین سے باہر منتقل کرنے کا منصوبہ بنانے لگی، بڑا دعویٰ

  

بیجنگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) انڈیا میں پابندی کے بعد ویڈیو شیئرنگ ایپ ٹک ٹاک نے اپنا ہید کوارٹر چین سے باہر منتقل کرنے کا منصوبہ بنانا شروع کردیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ٹک ٹاک کی پیرنٹ کمپنی بائٹ ڈانس نے انڈیا میں ٹک ٹاک سمیت 59 چینی ایپلی کیشنز پر پابندی لگنے کے بعد اپنا ہیڈ آفس چین سے باہر منتقل کرنے کا منصوبہ بنانا شروع کردیا ہے۔ انڈیا میں پابندی کی وجہ سے کمپنی کو بھاری نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے اور یہ فیصلہ اسی بنا پر کیا جارہا ہے۔

دنیا میں ٹک ٹاک استعمال کرنے والے 30 فیصد صارفین کی تعداد انڈیا میں مقیم ہے، انڈیا میں 60 کروڑ بار ٹک ٹاک کو ڈاؤن لوڈ کیا گیا ہے۔

ٹک ٹاک کمپنی کا ہیڈ کوارٹر منتقل کرنے کی تجویز دینے والے اعلیٰ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ " ہم اپنے صارفین کی رازداری اور سلامتی کے تحفظ کے لئے پوری طرح پرعزم ہیں کیونکہ ہم ایسا پلیٹ فارم تیار کرتے ہیں جو تخلیقی صلاحیتوں کو اجاگر کرتا اور دنیا بھر کے لاکھوں لوگوں کو خوشی دیتا ہے، ہم اپنے صارفین ، کارکنوں ، فنکاروں کی دلچسپی اور حق کے پیش نظر کوئی قدم اٹھائیں گے۔"

مزید :

بین الاقوامی -سائنس اور ٹیکنالوجی -