ماں باپ سے لڑکر گھر سے بھاگنے والی لڑکی زیادتی کے بعد قبل ، لاش مل گئی

ماں باپ سے لڑکر گھر سے بھاگنے والی لڑکی زیادتی کے بعد قبل ، لاش مل گئی
ماں باپ سے لڑکر گھر سے بھاگنے والی لڑکی زیادتی کے بعد قبل ، لاش مل گئی

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس میں ماں باپ کے ساتھ جھگڑ کر گھر سے بھاگ جانے والی 8سالہ بچی کو جنسی زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا۔ میل آن لائن کے مطابق اس بچی کا نام ویکا تیپلیاکووا تھا جو اپنے ماں باپ کے ساتھ جھگڑے کے بعد گھر سے نکل گئی۔ اسے سڑک سے ایک کار سوار میاں بیوی ایگور اور کرسٹینا ڈورنیکوف نے پک کیا اور تین دن بعد اس کی لاش برآمد ہو گئی۔پولیس نے اس میاں بیوی کو گرفتار کر لیا ہے۔

پولیس کے مطابق ایگور پہلے بھی خطرناک جرائم میں ملوث رہ چکا ہے۔ اس نے بچی کو کار میں بٹھانے کے بعد اپنی بیوی سے کہا کہ وہ بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا کر قتل کرنے جا رہا ہے۔ اس کی بیوی بھی اس سے خوفزدہ تھی چنانچہ اس نے بچی کو بچانے کے لیے کچھ نہیں کیا۔ملزم نے بچی کا گلہ گھونٹ کر اسے قتل کیا۔ بچی کو اسی روز قتل کر دیا گیا تھا جس روز وہ گھر سے فرار ہوئی تھی۔ ملزم کی بیوی کرسٹینا نے گرفتاری کے بعد بچی کی لاش برآمد کروائی جو ایک جھیل کے کنارے ملزم نے چھپا دی تھی۔

مزید :

بین الاقوامی -