اولمپکس میں شرکت کا خواب سچ ثابت ہو رہا ہے:حسیب طارق

اولمپکس میں شرکت کا خواب سچ ثابت ہو رہا ہے:حسیب طارق

  

 لاہور(سپورٹس رپورٹر)قومی تیراک حسیب طارق کا کہنا ہے کہ میرا خواب سچ ثابت ہونے جا رہا ہے، اولمپکس میں پاکستان کی نمائندگی کرنا بچپن سے خواب رہا ہے۔حسیب طارق ٹوکیو اولمپکس میں پاکستان کی نمائندگی کریں گے، انہیں خاتون تیراک بسمہ خان کے ہمراہ سوئمنگ میں یونیورسیلیٹی پلیس ملی ہے پاکستان کے دس ایتھلیٹس ٹوکیو اولمپکس میں پاکستان کی نمائندگی کر رہے ہیں۔اس حوالے حسیب طارق کا کہنا ہے کہ پاکستان کی کسی بھی سطح پر نمائندگی فخر اور اعزاز ہوتا ہے جبکہ اولمپکس تو کھیلوں کے سب سے بڑے مقابلے ہیں ان میں جانا ایک الگ احساس ہے،  اولمپکس کے خواب کے ساتھ سوئمنگ کی ہے اور اب یہ خواب سچ ثابت ہو رہا ہے جس کے لیے میں بہت خوش ہوں۔حسیب طارق نے کہا کہ اولمپکس کے لیے تیاری بہت اچھی جا رہی ہے، روزانہ ساڑھے تین گھنٹے ٹریننگ کرتا ہوں ڈیڑھ گھنٹہ جم اور دو گھنٹے پول میں گزارتا ہوں، میری کوشش ہے کہ اولمپکس میں بہتر سے بہتر انداز میں پاکستان کی نمائندگی کروں اور کوشش ہوگی کہ 100میٹر فری اسٹائل میں اپنا انفرادی قومی ریکارڈ بہتر کروں۔قومی تیراک حسیب طارق سترہ برس کی عمر میں کینیڈا چلے گئے تھے انہوں نے کینیڈا سے ہی گریجویشن کی، وہ ٹورنٹو میں مقیم ہیں کراچی سے تعلق رکھنے والے حسیب طارق تین ماہ قبل پاکستان آئے۔حسیب طارق نے بتایا کہ میں ہر سال پاکستان آتا ہوں پاکستان میں ہونے والے مقابلوں حصہ لیتا ہوں اور بیرون ملک مقابلوں میں بھی جاتا ہوں 2016 سے پاکستان کا بہترین سوئمر ہوں جبکہ 11 نیشنل ریکارڈز قائم کر چکا ہوں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -