سپریم کورٹ،سعد رضوی کی رہائی کی درخواست سماعت کیلئے مقرر

سپریم کورٹ،سعد رضوی کی رہائی کی درخواست سماعت کیلئے مقرر

  

 اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)سپریم کورٹ نے کالعدم تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ حافظ سعد رضوی کی نظر بندی کیخلاف درخواست سماعت کیلئے مقرر کردی،جسٹس سجاد علی شاہ کی سربراہی میں عدالت عظمیٰ کا دو رکنی بینچ 12 جولائی کو درخواست کی سماعت کرے گا۔ سعد رضوی کے چچا امیر حسین کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اپنایا گیا ہے کہ جن الزاما ت کے تحت سعد رضوی کو حراست میں لیا گیا ان کا کوئی مواد ریکا ر ڈ پر موجود نہیں، حکام نے تمام کارروائی ’ایجنسیوں کی نام نہاد رپورٹس‘ کی بنیاد پر کی ہے، حکومت نے فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے سے متعلق 16 نومبر 2020 کو کسی معاہدے کی تفصیلات عدالت کے سامنے نہیں رکھی، حکومت نے حقیقت کو چھپاتے ہوئے عدالت کو گمراہ کیا۔درخواست میں پنجا ب حکومت، ڈپٹی کمشنر لاہور، لاہور کے پولیس چیف، سپرنٹنڈنٹ کوٹ لکھپت جیل اور ایس ایچ او نواں کوٹ تھانے کو فریق بنایا گیا ہے۔یاد رہے رواں ماہ کے اوائل میں لاہور ہائی کورٹ کے جائزہ بورڈ نے پنجاب کے محکمہ داخلہ کی جانب سے سعد رضوی کی نظربندی میں توسیع کی درخواست مسترد کردی تھی، جس کے بعد ان کی رہائی کی راہ ہموار ہو گئی تھی۔ٹی ایل پی کے سربراہ خادم رضوی کے صاحبزادے سعد رضوی کو 12 اپریل کو ان الزامات کے تحت حراست میں لیا گیا تھا کہ انہوں نے اپنے پیروکاروں کو قانون کو اپنے ہاتھ میں لینے کیلئے اکسایا کیونکہ ان کے بقول فرانسیسی سفیر کو ملک سے نکالنے کے وعدے سے حکومت پیچھے ہٹ چکی تھی۔

سعد رضوی

مزید :

صفحہ اول -