جعلسازی سے خاتون ٹیچر کا پلاٹ ہتھیانے والا فراڈیا گرفتار

جعلسازی سے خاتون ٹیچر کا پلاٹ ہتھیانے والا فراڈیا گرفتار

  

لاہور (سپیشل رپورٹر)ملتان میں خاتون استاد عذرا ظفر کا پلاٹ ہتھیانے والے شاطر جعلساز ظہور کو اینٹی کرپشن نے حساس اداروں کی مد د گرفتار کر کے حوالات میں بند کر دیا، ملزم کی جعلی شناختی کارڈ پر فرضی نام ہونے کی وجہ سے ڈھونڈنا مشکل تھا تاہم اینٹی کرپشن ملتان نے حساس اداروں کی مدد سے ملزم ظہور احمد کو کہروڑ پکا سے گرفتار کر لیا۔ مکمل انکوائری کے بعد ایس سی او لینڈ ریکارڈ سینٹر ملتان ندیم لودھی اور رجسٹری برانچ کے جونیئر کلرک ندیم چٹھہ سمیت سات افراد کے خلاف پرچہ درج کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ملزم حافظ ظہور نے یونس چٹھہ،محمد عامر و دیگر کے ساتھ نادرا سے جعلی شناختی کارڈ بنوایااور جعلی شناختی کارڈ پر بیع نامہ 2023/1 درج کرو اکے خاتون ٹیچر کاملتان آفیسرز کالونی میں واقع ایک کنال کا قیمتی پلاٹ ہتھیا لیا۔ خاتون نے اپنی ساتھ ہونے والی نا انصافی سے متعلق ٹوئٹر پر وزیر اعظم سے اپیل کی تھی۔ جس پر ڈی جی اینٹی کرپشن گوہر نفیس نے ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ملتان کو فوری کارروائی کا حکم دیا تھا،ریجنل ڈائریکٹر حیدر وٹو نے خاتون ٹیچر سے رابطہ کرکے حقائق معلوم کئے اور پراپرٹی کی دستاویزات منگوا کر انکوائری شروع کی۔چھان بین اور ملزم ظہور کے اعترافی بیان سے قبضہ مافیا کی جعلسازی واضح ہوگئی۔ چھان بین کے بعد خاتون کی مدعیت میں پرچہ درج کر لیا گیا۔ اس حوالے سے ڈی جی اینٹی کرپشن کا کہنا تھا کہ قبضہ میں ملوث ملزمان کے خلاف قانون کے مطابق سزا دلوائی جائے گی۔ ملزم کا چار روزہ ریمانڈ حاصل کر لیا گیا ہے۔ قبضہ مافیا کے خلاف پنجاب بھر کریک ڈاؤن جاری ہے۔

فراڈیا گرفتار

مزید :

صفحہ آخر -