مقبوضہ کشمیر میں مزید 3نوجوان شہید: 3روز میں شہداء کی تعداد 9ہوگئی، تحریک آزادی کے حامی 11سرکاری ملازمین بر طرف، 21مسلمان بیو پاری گرفتار، مال مویشی، گاڑیاں ضبط

مقبوضہ کشمیر میں مزید 3نوجوان شہید: 3روز میں شہداء کی تعداد 9ہوگئی، تحریک ...

  

 سرینگر (نیوز ایجنسیاں)غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے اپنی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی میں ضلع اسلام آبادمیں تین کشمیری نو جوانوں کو شہید کردیاجس کے بعد جمعرات سے ہفتہ کے روز تک شہید ہونیوالے نوجوانوں کی تعداد 9ہوگئی ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق فوجیوں نے نوجوانوں کو ضلع کے علا قے کواریگام اچھہ بل میں محاصرے اورتلاشی کی ایک کارروائی کے دوران شہید کیا۔بھارتی فورسز کے اہلکاروں نے محاصرے اورتلاشی کارروائی کے دوران اپنا پیشہ ورانہ فرض انجام دینے پر صحافی شاہ جنید کو تشددکا نشانہ بناکرزخمی کردیا۔آخری اطلاعات آنے تک علاقے میں فوجی آپریشن جاری تھا۔قبل ازیں ایسی ہی کارروائیوں میں بھارتی فوجیوں نے جمعرا ت کو پلوامہ اور کولگام اضلاع میں دو دونوجوانوں جبکہ راجوری میں ایک نوجوان کو شہید کیاتھا۔ فوجیوں نے گزشتہ روز راجوری میں ایک اور نوجوان کو شہید کیا تھا۔ادھر سرینگر کے مضا فاتی علاقے ہوکرسرشکارگاہ کے ایک خاندان نے بدھ اورجمعرات کی درمیانی رات کوبھارتی فوجیوں کی طرف سے ان کے گھر پر چھاپے کے دوران لاکھوں روپے مالیت کا سونا، نقدی اور پشمینہ شال لوٹنے کیخلاف سرینگرکے پریس انکلیو میں احتجاجی مظاہرہ کیا۔ بھارتی حکام نے مقبوضہ جموں وکشمیر میں تحریک آزادی کیساتھ وابستگی کی بنا پر 11 سرکاری ملاز مین کو ملازمت سے برطرف کردیا ہے۔بھارتی پولیس نے جموں خطے میں مویشیوں کی سمگلنگ کے الزامات پر ضلع ریاسی کے مختلف علاقوں میں چھاپوں کے دوران اور ناکوں پر21 مسلمان بیوپاریوں کو گرفتار کیا۔ پولیس نے 124 مویشیوں کیساتھ ساتھ کئی گاڑیاں بھی ضبط کرلیں جو جانوروں کو لے جانے کیلئے استعمال کی جارہی تھیں۔

کشمیری شہید

مزید :

صفحہ اول -