اسلامیہ کالج کے طلباء پر  پولیس کی جانب سے بہمانہ  تشدد کی شدید الفاظ میں مذمت

 اسلامیہ کالج کے طلباء پر  پولیس کی جانب سے بہمانہ  تشدد کی شدید الفاظ میں ...

  

 پشاور (سٹی رپورٹر)خلیل سٹوڈنٹس ارگنائزیشن یونیورسٹی کیمپس پشاور نے اسلامیہ کالج کے طلباء پر پولیس کی جانب سے بہمانہ تشدد کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ گزشتہ روز طلباء کیساتھ ہونیوالے ناخوشگوار واقعہ پر وائس چانسلر اسلامیہ کالج یونیورسٹی سے رپورٹ طلب کی جائے اور اسکو فوری ہٹایا جائے اور  یونیورسٹی کیمپس کے ڈی ایس پی نیاز محمد اور ایس ایچ او یوسف جان کو فلفور معطل کیا جائے جبکہ احتجاج کے دورا ن جن طلباء سے موبائیل اور اور دیگر قیمتی اشیاء لیے گئے ہے وہ واپس کیے جائے بصورت دیگر احتجاج جاری  رہے گا  پشاور پریس کلب میں خلیل سٹوڈنٹس ارگنائزیشن یونیورسٹی کیمپس  صدر ارباب وقاص نے دیگر عہدیداران اور طلباء کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ  پچھلے دو ہفتوں سے اسلامیہ کالج یونیورسٹی  کے طلباء ان لائن امتحان اور ناجائز جرمانوں کے خلاف پر امن احتجاج شروع کیا ہے  لیکن اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے وائس چانسلر اور انتظامیہ نے مسائل حل کرنے میں کوئی سنجیدگی ظاہر نہیں کی اور الٹا طلباء پر پولیس کی جناب سے گزشتہ روز لاٹھی چارج اور تشدد کیا گیا جس سے کئی طلباء زخمی ہوئے جو قابل مذمت ہے  اور فرحان خلیل نامی طالب علم بھی شدید زخمی ہوا جسکی رپورٹ درج ہونی چاہئے خلیل سٹوڈنٹس ارگنائزیشن کے عہدیداران نے مطالبہ کیا ہے کہ طلباء پر پولیس کی جانب سے بہمانہ تشدد اور لاٹھی چارج کے خلاف وائس چانسلر  اسلامیہ کالج یونیورسٹی  سے رپورٹ طلب کی جائے اور اسکو فوری ہٹایا جائے جبکہ واقعہ میں ملوث کیمپس ڈی ایس پی اور ایس ایچ و کو معطل کرنی سمیت گورنر خیبر پختونخوا شاہ فرمان  طلباء کو درپیش مسائل حل کریں بصورت دیگر احتجاج جاری رہے گا۔    

مزید :

پشاورصفحہ آخر -