ریاست اسلامی میں قانون اور اس کا نفاذ معاشرے میں استحکام پیدا کرتا ہے 

ریاست اسلامی میں قانون اور اس کا نفاذ معاشرے میں استحکام پیدا کرتا ہے 

  

  پشاور (سٹی رپورٹر)تنظیم الاخوان پاکستان کے امیر عبدالقدیر اعوان نے کہا ہے کہ ریاست اسلامی میں قانون اور اس کا نفاذ معاشرے میں استحکام پیدا کرتا ہے،ریاست مضبوط ہوتی ہے اور آپس میں اتفاق اور ہم آہنگی کو فروغ ملتا ہے۔جب ہم اپنے ذہن اور عقل سے تیار کردہ قواعدو ضوابط اختیا ر کرتے ہیں تو وہ فساد کا سبب بنتے ہیں اور اسلامی اصول جہاں بھی نافذ ہوں گے وہاں عدل ہوگا اورجتنا اسلامی اصولوں سے باہر ہوں گے اتنا فساد ہوگا۔ان خیالات کا اظہار امیر عبدالقدیر اعوان نے گزشتہ روز روحانی اجتماع کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم مخلوق ہیں ہمارا علم قلیل ہے خالق بہتر جانتے ہیں کہ کیا ہمارے لیے بہتر ہے نبی کریم ﷺ کے ارشادات کی صدیاں گواہ ہیں کہ جو اصول اللہ کریم نے آپ کو عطا فرمائے ان سے دنیا و آخرت کا فائدہ ہو رہا ہے۔حق سے جہاں بھی تجاوز ہوگا قرآن کریم اس کو فساد فرماتا ہے کہ وہاں فساد ہو گا۔انفرادی زندگیوں سے لے کر بحیثیت مجموعی سارے حالات ہمارے سامنے ہیں جہاں بھی حق سے تجاوز ہوا وہاں فساد ہی پھیلا ہے۔جہاں بھی آپ کو معاشرے میں حالات خراب نظر آرہے ہیں آپ اس کا جائزہ لیں وہاں پر دین اسلام سے تجاوز ہوگا۔دین اسلام کے کسی بھی اصول کو جہاں ہم چھوڑے گے وہاں آپ کو نفاق کی صورت نظر آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں حصے کا فرض ادا کرنا چاہیے درست عمل اختیار کریں اس کو اپنی ذات اپنے گھر سے شروع کریں ایسے ہی معاشرے بنتے ہیں افراد سے معاشرے ہوتے ہیں جس معاشرے کے افراد اپنا کردار درست کر لیتے ہیں وہی معاشرے خوبصورت بنتے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -