افغانستان،سکیورٹی فورسز سے جھڑپوں میں 109طالبان ہلاک،25شدید زخمی

افغانستان،سکیورٹی فورسز سے جھڑپوں میں 109طالبان ہلاک،25شدید زخمی

  

 قندھار(شِنہوا)افغانستان کے 2 جنوبی صوبوں میں لڑائیوں اور جھڑپوں کے دوران کم از کم 109 طالبان عسکریت پسند ہلاک اور 25 زخمی ہو گئے ہیں۔افغان فوج کی 205 ویں اتال کور نے ہفتے کے روز اپنے بیان میں کہا کہ افغان قومی دفاعی و سلامتی فورسز(اے این ڈی ایس ایف)نے صوبہ قندھار کے دارالحکومت قندھار شہر کے پولیس ضلع 7 اور اس کے ہمسایہ مضافاتی ضلع دند میں افغان فضائیہ(اے اے ایف)کی مدد سے ایک کلین اپ آپریشن کیا جس  کے دوران 70 طالبان عسکریت پسند ہلاک اور 8 دیگر زخمی ہو گئے ہیں۔جمعہ کے اوائل میں طالبان نے اے این ڈی ایس ایف کے ٹھکانوں پر حملہ کیا اور قندھار شہر میں گھسنے کی کوشش کی جس کے نتیجے میں دن بھر شدید لڑائی جاری رہی۔ فوج کی 215 ویں میوند کور کے مطابق ہمسایہ صوبہ ہلمند میں افغان قومی دفاعی و سلامتی فورسز نے افغان فضائیہ کی مدد سے صوبائی دارالحکومت لشکرگاہ کے نواحی علاقے قلعہ بولان میں طالبان کے ایک اجتماع کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں 39 طالبان عسکریت پسند ہلاک اور 17 زخمی ہو گئے ہیں۔ذرائع کے مطابق عسکریت پسندوں کے 2 اہم مقامی رہنما تازہ گل اور نہمون بھی مرنیوالوں میں شامل ہیں۔دونوں صوبوں میں عسکریت پسندوں کے اسلحہ اور گولہ بارود کی بھاری مقدار کو بھی تباہ کر دیا گیا ہے۔سیکورٹی فورسز کی جانب ممکنہ جانی نقصان کے بارے میں تفصیلات معلوم نہیں ہو سکی ہیں۔ عسکریت پسند گروہ طالبان کی جانب سے ابھی تک ان خبروں پر کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا ہے۔

افغانستان ہلاکتیں 

مزید :

صفحہ اول -