اساتذہ کی سنیارٹی سے متعلق وزارت تعلیم کی رپورٹ غیر تسلی بخش قرار 

 اساتذہ کی سنیارٹی سے متعلق وزارت تعلیم کی رپورٹ غیر تسلی بخش قرار 
 اساتذہ کی سنیارٹی سے متعلق وزارت تعلیم کی رپورٹ غیر تسلی بخش قرار 
سورس: File Photo

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی نظامت تعلیمات کے زیراہتمام سکینڈری سکول ٹیچر( ایس ایس ٹی اساتذہ) کی سنیارٹی سے متعلق وزارت تعلیم کی رپورٹ کو فیڈرل سروس ٹربیونل کی جانب سے غیر تسلی بخش قرار د ےدیا،مخصوص اساتذہ کوترقیاں دینےکےلیےترقی کی تاریخ یکم جنوری2011ء(وزیراعظم کے احکامات )کوتبدیل کروانے کے لیے کیس وزیر اعظم کو ارسال کر دیا۔

تفصیلات کےمطابق وزارت تعلیم کےزیراہتمام سرکاری تعلیمی اداروں کے ایس ایس ٹی اساتذہ کی سنیارٹی طےنہ ہونےسےمسائل بڑھناشروع ہوگئےہیں،وفاقی نظامت تعلیمات نےتاحال فائنل سنیارٹی طے نہیں کی  جسکی وجہ سے1500سے زائد اساتذہ(خواتین و مرداساتذہ) میں بے چینی بڑھ رہی ہے۔

وزارت تعلیم نے جوائننگ کی تاریخ کو نظر انداز کرکے رپورٹ فیڈرل سروسز ٹربیونل میں جمع کروائی جس کو ٹربیونل نے غیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے ایک ماہ میں سنیارٹی فائنل کرنے کی ہدایات جاری کردیں ،اس کے علاوہ ایس ایس ٹی سنیارٹی ایشو پر ٹربیونل نے سیکرٹری وزارت تعلیم کو آئندہ سماعت پر طلب کر لیا ہے ۔

ذرائع کے مطابق وزیر اعظم آفس نے سنیارٹی کے معاملے کانوٹس لیتے ہوئے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن میں ایک اعلیٰ سطح کی کمیٹی تشکیل دی جس کی دو سے زائد میٹنگ ہو چکی ہیں، کمیٹی کو ایک افسر کی جانب سے غلط بریفنگ دی گئی ،خواتین اساتذہ نے اس حوالے سے بتایا ہے کہ 25سال سے ہماری ترقی نہیں ہوئی 2011ءمیں اس وقت کے وزیر اعظم نے ہماری پوسٹیں اپ گریڈ کر کے ہمیں ترقی دی تاہم گیارہ سال گزرنے کے باوجود ہماری ترقی نہیں ہو سکی جبکہ وزارت تعلیم کے حکام نے اب وزیر اعظم کے احکامات کو غیر مناسب قرار دینے کے لیے سمری بھجوادی ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ یکم جنوری2011ءکے وزیر اعظم کے احکامات کو چھیڑا گیا تو ہزاروں اساتذہ متاثر ہوں گے اور ان کی ترقیاں متاثر ہوں گی،کچھ اساتذہ کو سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات پر یکم جنوری 2011ءسے ایس ایس ٹی بنایا گیا تو عدالتی احکامات کی خلاف ورزی ہو گی،وزیر اعظم کے احکامات ماڈل کالجز،ایف جی کینٹ اینڈ گیریژن میں لاگو ہو چکا ہے جس کو چھیڑا گیا توہزاروں اساتذہ میں بے چینی بڑھے گی اور اساتذہ احتجاج پر مجبور ہوں گے جو موجودہ حکومت کی بدنامی کا باعث بنے گی۔

ایس ایس ٹی خواتین اساتذہ نے وزیر اعظم،وزیر تعلیم ،سیکرٹری اسٹیبلمشنٹ ڈویڑن سمیت متعلقہ حکام سے اپیل کی ہے کہ وفاقی نظامت تعلیمات کی جانب سے پرویڑنل سنیارٹی کے بعد حتمی سنیارٹی لسٹ فوری جاری کر کے اساتذہ کو ترقیاں دی جائیں،اگر فوری طور پر ترقیاں نہ کی گئیں تو ایف پی ایس سی سے نئے تعینات ہونے والے وائس پرنسپل سینیارٹی میں اوپر ہو جائیں گے جس سے نیا پنڈورا باکس کھلنے کا خدشہ ہے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -