مندر میں شراب اور گوشت کے استعمال  کا الزام، بھارت میں پنڈت کو قتل کردیا گیا

مندر میں شراب اور گوشت کے استعمال  کا الزام، بھارت میں پنڈت کو قتل کردیا گیا
مندر میں شراب اور گوشت کے استعمال  کا الزام، بھارت میں پنڈت کو قتل کردیا گیا
سورس: File

  

لکھنؤ (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست اتر پردیش میں مندر میں گوشت اور شراب رکھنے کے الزام میں ایک ہندو پنڈت کو قتل کردیا گیا۔

انڈیا ٹوڈے کے مطابق واقعہ پیلی بھٹ میں پیش آیا جہاں 7 جون کو سرجیت سنگھ نامی مقامی شخص نے مہادیو ستھان مندر کے پنڈت بابا راشی گری کی گمشدگی کی رپورٹ درج کرائی۔ پولیس نے تحقیقات شروع کیں تو ایک لاش برآمد ہوئی جس کی شناخت بعد میں راشی گری کے نام سے ہوئی۔ پنڈت کی لاش سڑک کے کنارے پڑی ہوئی تھی ۔

پولیس نے قتل کی تحقیقات شروع کیں تو راشی گری آخری بار سی سی ٹی فوٹیج میں لالا رام کے ساتھ نظر آیا۔ پولیس نے اس سے پوچھ گچھ کی تو اس نے انکشاف کیا کہ اس نے اپنے دیگر دو ساتھیوں دھن راج اور مکھیا کے ساتھ مل کر پنڈت کو تشدد کرکے ہلاک کیا تھا۔ 

ملزم نے اپنے اعترافی بیان میں کہا کہ پنڈت مندر کی حدود میں شراب پیتا اور گوشت کھاتا تھا، ہم نے کئی بار اس کو یہ کام کرنے سے منع کیا لیکن وہ باز نہ آیا جس پر اس کے قتل کا منصوبہ بنایا۔  پولیس کے مطابق قتل میں ملوث تینوں ملزمان کو گرفتار کرکے قتل میں استعمال ہونے والی لاٹھیاں بھی برآمد کرلی گئی ہیں۔

مزید :

جرم و انصاف -