ٹیکسوں میں اضافہ‘کل سے فلور ملز کی ہڑتال شروع

ٹیکسوں میں اضافہ‘کل سے فلور ملز کی ہڑتال شروع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان (نیوز رپورٹر)پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین(بقیہ نمبر9صفحہ7پر)

 نواب لیاقت علی خان، سابق وائس چیئرمین و ایگزیکٹوممبر چوہدری محمد جمیل،سابق وائس چیئرمین ملک ممتاز نے کہا کہ حکومت کی جانب سے لگائے جانے والے ود ہولڈنگ ٹیکس کا نفاذ کسی صورت قبول نہیں ایف بی آر کے ود ہولڈنگ ٹیکس ایجنٹ نہیں بنیں گے۔ پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن ملک بھر کے فلور ملز کی نمائندہ تنظیم ہیجس کا ذمہ ملک بھر کے فلور ملز کے حقوق کا تحفظ کرنا ہے حکومت نے حالیہ بجٹ میں آٹے کا کاروبار کرنے والے دوکانداروں پر ٹیکس لگادیا اوراس ٹیکس کو وصول کرنے کے لیے ایف بی آر نے فلور ملز کو اپنا نمائند مقرر کیا ہے۔ فلور ملزآٹے کے دوکانداروں سے ود ہولڈنگ ٹیکس وصول کرکے ایف بی آر میں جمع کروائیں۔پاکستان کے تمام فلور ملز مالکان نے آٹے کے دوکانداروں سے ود ہولڈنگ ٹیکس وصول کرنے سے انکار کرتے ہوئے سراپا احتجاج ہیں ٹیکس اکٹھا کرنا ایف بی آر کی ذمہ داری ہے نہ کہ فلور ملز مالکان کی۔ اس مقصد کے لیے ایف بی آر آفیسران لاکھوں،کروڑوں روپے کی تنخواہیں لیتے ہیں یہ کیا صرف دفاتر میں بیٹھنے کی تنخواہیں لیتے ہیں۔ ہماری سمجھ سے بالاتر ہے کہ ٹیکس حکومت لگائے اور فلور ملز مالکان آٹے کے دوکانداروں سے  اسے اکٹھا کرکے ایف بی آر میں جمع کروائیں اس کے بعد سالانہ آڈٹ میں کوئی غلطی رہ گئی تو بھی فلور ملز مالکان اس کے ذمہ دار ہونگے۔حکومت کی جانب سے فلور ملز مالکان پر لاگو کیا گیا یہ طریقہ ناقابل عمل ہے ہم اس کو ہر گز قبول نہیں کرتے۔ودہولڈنگ ٹیکس کے نفاذ کے معاملے پر حکومت اور فلور ملز و ہول سیلرز میں تاحال ڈیڈلاک برقرار ہے ود ہولڈنگ ٹیکس عائد ہونے کی صورت میں فلورملز اور ہول سیلرز نے ہڑتال کا اعلان کر دیا گیا ہے جو کہ غیر معینہ مدت تک جاری رہے گا۔پاکستان بھر کی 1500 سے زائد فلور ملز میں گندم کی واشنگ بند کردی گئی11 جولائی کو آٹے پیکنگ اور ترسیل بھی مکمل طور پر بند کر دی جائے گی لاہورسمیت صوبہ بھر میں آئندہ دو روز میں آٹے کی سپلائی بند ہونے سے مشکلات بڑھنے کا خدشہ ہے۔فلور ملز بند ہونے کی وجہ سے ان میں کام کرنے والے کئی ملازمین بھی بیروز گار ہوجائیں گے جس کی وجہ یہ حکومت ہوگی۔ حکومت کی جانب سے ود ہولڈنگ ٹیکس لگنے سے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگا اور آٹے کی قیمت بھی بڑھ جائے گی۔خدارا حکومت مہنگائی سے ستائی عوام کا بھی خیال رکھتے ہوئے ود ہولڈنگ ٹیکس کو ختم کرئے۔ملتان۔پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین نواب لیاقت علی خان، سابق وائس چیئرمین و ایگزیکٹوممبر چوہدری محمد جمیل،سابق وائس چیئرمین ملک ممتاز حکومت کی جانب سے لگائے جانے والے ود ہولڈنگ ٹیکس کا نفاذ پر اظہار خیال کرتے ہوئے دوسری جانب فلور ملز بند ہیں۔

وہاڑی(بیورورپورٹ،نمائندہ خصوصی) حکومت کی جانب سے (بقیہ نمبر10صفحہ7پر)

صنعتوں پر لگائے گئے بے جا ٹیکسز کے خلاف وہاڑی فلور ملز ایسوسی ایشن کی ہنگامی پریس کانفرنس کی گئی کل سے فلور ملز کی ہڑتال کا اعلان کردیا کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ضلعی صدر فلور ملز ایسوسی ایشن شیخ شہباز محمود نے کہا کہ حکومت کی جانب سے فلور ملز پر لگائے گئے ٹیکسز ہمارے معاشی قتل کے مترادف ہیں نئے لاگو کئے گئے ٹیکسز کے مطابق فی کلو آٹے پر دس روپے ٹیکس لگ رہا ہے دوسری جانب حکومت پنجاب عوام کو سستا آٹا فراہم کرنے کے احکامات صادر کر رہی ہے جو کہ موجودہ صورتحال میں ناممکن ہے حکومتی ظالمانہ فیصلوں کے خلاف کل سے ضلع وہاڑی سمیت ملک بھر کی فلور ملز ہڑتال کریں گی کوئی بھی مل آٹا فروخت نہیں کرے گی اور یہ ہڑتال ہمارے مطالبات تسلیم ہونے تک جاری رہے گی اس موقع پر فلور ملز ایسوسی ایشن راہنما عاصم اشرف کمبوہ، سیٹھ محمد یونس، چوہدری صفدر گجر، شیخ محمد حسین سلیم، جاوید اصغر، اظہر خان، اسد سرور، حافظ عبید اللہ، فیصل، محمد جاوید، طارق محمود، شیخ اصغر، سعود، عبدالرووف، عظمان رانا سمیت دیگر بھی موجود تھے