قومی گرڈ سٹیشن 650 میگا واٹ بجلی واپس لینے کی بات کی غیر آئینی ہے:قائم علی شاہ

قومی گرڈ سٹیشن 650 میگا واٹ بجلی واپس لینے کی بات کی غیر آئینی ہے:قائم علی شاہ
 قومی گرڈ سٹیشن 650 میگا واٹ بجلی واپس لینے کی بات کی غیر آئینی ہے:قائم علی شاہ

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر اعلی سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا ہے کہ قومی گرڈ سٹیشن سے کراچی کو فراہم کی جانے والی 650 میگا واٹ بجلی واپس لینے کی بات کی غیر آئینی ہے کیونکہ کراچی کو بجلی کی فراہمی سے متعلق فیصلہ مشترکہ مفادات کونسل ہی کرسکتی ہے۔سندھ اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کراچی کو قومی گرڈ سٹیشن سے فراہم کی جانے والی بجلی کی کٹوتی کا معاملہ سابقہ دور حکومت میں بھی اٹھایا گیا تاہم کراچی کو فراہم کی جانے والی بجلی میں کمی نہیں کی جا سکتی۔ کراچی کو 650 میگا واٹ بجلی فراہم کرنے کے حوالے سے فیصلہ مشترکہ مفادات کونسل میں کیا گیا تھا اور اب بھی اس حوالے سے کوئیبھی فیصلہ کونسل ہی کرے گی۔ انہوں نے اراکین اسمبلی سے کہا ہے کہ وہ صوبائی اسمبلی میں اس حوالے سے قرار داد منظور کرکے مشترکہ مفادات کونسل میں ان کے ہاتھ مضبوط کریں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ ملک بھر کو 71 فیصد گیس فراہم کرتا ہے اور بدلے میں اس کو صرف 22فیصد ملتی ہے جب کہ باقی پنجاب کو فراہم کی جاتی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز وفاقی وزیر پانی وبجلی خواجہ محمد آصف کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں کراچی کو ملنے والی 650 میگاواٹ بجلی میں سے 350 میگاواٹ کی کٹوتی کا فیصلہ کیاگیا تھا جب کہ اے این پی کے سینیٹرزاہدخان کی زیرصدارت ہونے والے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے پانی وبجلی کے اجلاس میں بھی کراچی کو قومی گرڈ اسٹیشن سے فراہم کی جانے والی 650 میگاواٹ بجلی روکنے کا کہا گیا تھا۔

مزید :

کراچی -