جائیداد کے کرایوں پر 10فیصد یونیفارم انکم ٹیکس متعین کیاجائے

جائیداد کے کرایوں پر 10فیصد یونیفارم انکم ٹیکس متعین کیاجائے

کراچی(اکنامک رپورٹر) فیڈریشن آف پاکستا ن چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈ سٹر ی کے صدر زکر یا عثمان نے کہا کہ حکومت جا ئید اد کی کرایوں کی آمدنی پر ٹیکس کی مد میں زیا دہ وصولیا ں کر سکتی ہے ۔اگر وہ 10فیصد شر ح سے ایک حتمی یو نیفارم انکم ٹیکس ریٹ متعین کر دے ۔ بجا ئے اسکے کہ وہ ٹیکس دھند گا ن کورینٹل آمدنی پر مختلف قسم کے ٹیکس شر حوں اور پیچیدہ حساب کتا ب اور کھا توں میں اُلجھائے ۔انہوں نے کہا کہ پچھلے سال کے بجٹ 2013-14 میں حکومت نے رینٹل انکم پر مختلف ٹیکس سلیب متعا رف کئے تھے ۔ ان کو فور ی طور پر ختم کر دینا چا ئیے اور 10فیصد کی شر ح سے ایک یو نیفارم ریٹ دوبارہ متعا رف کرا نا چا ئیے ۔ کیو نکہ مختلف قسم کے ٹیکس سلیب سے مس ڈیکلریشن ،کرپشن اور ٹیکس چو ر ی کا راستہ کھل گیا ہے ۔ لینڈ لارڈ ٹیکس سے بچنے کے لیے جعلی رسید یں بناتا ہے اور ٹیکس چو ر ی کیا جاتا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ فنا نس منسٹر کے ساتھ بالمشانہ ملاقات میں بھی یہ با ت واضح کی تھی کہ حکومت زبر دستی کسی سے ٹیکس وصول نہیں کر سکتی ۔ لو گوں کو ٹیکس کے خوفزدہ ما حول سے با ہر نکا لیں اور ٹیکس کی شر ح کو منا سب کر یں اور پالیسیوں کو نر م کر یں تو ٹیکس دھندگا ن خوشی سے حکومت کو ٹیکس ادا کر ینگے ۔ انہیں غیر ضروری طور پر ریکا رڈ کیپنگ اور حساب کتا ب میں نہ الجھا یا جائے ۔ زکر یا عثمان نے مزید کہا کہ رینٹل انکم پر ٹیکس کی شر ح میں 10تا24فیصد یک لخت بے پنا ہ اضا فہ سے گوداموں کے کرایوں میں کئی گنا اضا فہ ہو چکا ہے ۔حکومت یہ بات خوب جا نتی ہے کہ ہما رے ملک میں گودام کی سہو لت بہت کم ہے اور کا روبا ری اور تاجر برا دری کو کرا یہ پر گودام میں جگہ لینی پڑتی ہے تا کہ اپنے مال کو وہا ں ذخیرہ کر سکیں ۔لیکن حکومت کی طر ف سے رینٹل پر انکم ٹیکس میں ہو شر با اضا فہ کی وجہ سے گوداموں کے مالکان سے بھی کرا یوںمیں بے حد اضافہ کر دیا ہے۔

 جسکی وجہ سے کاروباری اور پیداوری لاگت میں بھی بہت اضافہ ہو رہا ہے ۔ جسکا خمیازہ عا م صارف کو ہی بالآخر بھگتنا پڑتا ہے ۔ زکر یا عثمان نے مزید بتا یا کہ فیڈریشن نے اپنے بجٹ تجاویز میںFBRسے کہا ہے کہ وہ رینٹل انکم پر ٹیکس کی شر ح کو حتمی طور پر 10 فیصد مقرر کر دے اس سے ٹیکس دھند گا ن کی حوصلہ افزائی ہو گئی اور وہ بغیر کسی خوف کے ایما نداری اور خوشی سے حکومت کو ٹیکس دینگے ۔ کم شر ح ٹیکس میکنزم سے حکومت کو اپنے ٹیکس نیٹ میں نئے ٹیکس دھندگا ن کولا نے اور ٹیکس نیٹ کو وسعت دینے میںمدد بھی ملے گی ۔

مزید : کامرس