بیوی بچے ملک سے باہر رکھنے والے چینی حکام کے گرد گھیرا تنگ

بیوی بچے ملک سے باہر رکھنے والے چینی حکام کے گرد گھیرا تنگ
بیوی بچے ملک سے باہر رکھنے والے چینی حکام کے گرد گھیرا تنگ

  

بیجنگ (نیوز ڈیسک) چینی حکومت نے کرپشن کے خلاف ایکشن تیز کرتے ہوئے ان افسران کے خلاف گھیرا تنگ کرنا شروع کردیا ہے کہ جن کے بیوی بچے غیر ملکوں میں مقیم ہیں اور وہاں کی مستقل شہریت حاصل کرچکے ہیں۔ جنوبی صوبے گوانگ ڈونگ میں تقریباً 900 افسران کی یا تو تنزلی کردی گئی ہے یا اُن کو استعفیٰ دینے پر مجبور کردیا گیا ہے کیونکہ ان کے بیوی بچے بیرون ملک مقیم ہیں اور ان ملکوں کے مستقل شہری ہیں۔ حکومت کا موقف ہے کہ خاندان کی دوسرے ملکوں میں مستقل شہریت کو کرپشن کیلئے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ حکومت کا خیال ہے کہ کرپٹ افسران لوٹ کا مال بیرون ملک بھیجتے ہیں اور پھر کسی خطرے کی صورت میں اپنے غیر ملکی شہریت رکھنے والے خاندان کے پاس فرار ہوجاتے ہیں۔ تحقیق کاروں کا اندازہ ہے کہ پچھلی دو دہائیوں میں ہزاروں چینی افسران ملک سے فرار ہوچکے ہیں اور ان لوگوں کو اربوں روپے کی کرپشن کرکے اپنی دولت بیرون ممالک منتقل کرنے کا ذمہ دار قرار دیا جارہا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس