سات سال بعد بلیک واٹر عدالت میں

سات سال بعد بلیک واٹر عدالت میں
سات سال بعد بلیک واٹر عدالت میں
کیپشن: Black water

  

واشنگٹن (نیوز ڈیسک ) امریکہ میں 7 سال بعد 14عراقی شہریوں کو قتل اور 18کو زخمی کرنے والے بلیک واٹر کے ان 4 گارڈز کا ٹرائل شروع کر دیا گیا ہے، جن کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ ان کی وجہ سے دنیا بھر میں امریکہ کے لئے نفرت کے جذبات ابھرے۔ اگرچہ یہ کہا جا رہا ہے کہ 16ستمبر 2007ء کو ہونے والی خونریزی گارڈز نے اپنی جان کے دفاع کے طور پر کی لیکن ناقدین کی طرف سے جارج بش انتظامیہ کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ 7سال پرانے کیس میں ملوث گارڈز کا ٹرائل رواں ہفتہ شروع کر دیا گیا ہے اور پراسیکیوٹرز شہادتوں کے لئے درجنوں عراقیوں کو بلوانے کی حکمت عملی طے کر رہے ہیں۔ واضح رہے کہ بغداد میں ہونے والی اس خون ریزی کو بلیک واٹرز کی طرف سے عراق جنگ کا سیاہ ترین واقعہ قرار دیا جا رہا ہے، جس وجہ سے عراقی حکام اب مذکورہ گارڈز کا ٹرائل چاہ رہے ہیں۔ ٹرائل کے دوران وکیل صفائی یہ موقف پیش کر رہے ہیں کہ چوں کہ وہ جنگ کا ماحول تھا، اسی لئے گارڈ کی ذہنی حالت درست نہیں تھی۔

مزید :

جرم و انصاف -