مصری فرعونوں کی مزید ممیاں دریافت

مصری فرعونوں کی مزید ممیاں دریافت
مصری فرعونوں کی مزید ممیاں دریافت
کیپشن: Egypt

  

قاہرہ (نیوز ڈیسک) مصر فرعونوں کے قدیم مقبروں کی وجہ سے دنیا بھر میں مشہور ہے جن میں اب ایک نیا اضافہ ہو گیا ہے کیونکہ لکسر شہر میں ایک چار ہزار سال پرانا مقبرہ دریافت ہوا ہے۔ مصر کے وزیر آثار قدیمہ کا کہنا ہے کہ یہ مقبرہ قدیم مصری فرعونوں کے گیارہویں خاندان کے کسی اہم فرد سے تعلق رکھتا ہے۔ محمد ابراہیم نے بتایا کہ مقبرے کا چوڑا احاطہ یہ ظاہر کرتا ہے کہ یہ فرعونوں کے شاہی خاندان کے کسی فرد کی آخری آرام گاہ ہے۔ مقبرہ دریافت کرنے والی ٹیم کے سربراہ ہوزے گیلن نے امید ظاہر کی ہے کہ یہ دریافت فرعونوں کے بارے میں نئی معلومات کا دروازہ کھول دے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس دریافت سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ ڈیرہ ابوناگا کے علاقہ میں فرعونوں کے گیارہویں خاندان کے اور مقبرے بھی ہو سکتے ہیں۔ وزارت آثار قدیمہ کے ایک افسر نے خیال ظاہر کیا ہے کہ یہ مقبرہ کئی افراد کی اجتماعی قبر بھی ہو سکتا ہے کیونکہ یہاں سے کافی بڑی تعداد میں انسانی باقیات ملی ہیں۔ لکسر کا شہر دریائے نیل کے کنارے واقع ہے اور یہ قدیم شہر تھیبنز کی جگہ آباد کیا گیا ہے جو فرعونوں کے دور میں مصر کا دارالحکومت تھا۔

مزید :

تفریح -