سکیورٹی اکیڈمی پر دہشتگردوں کا حملہ باعث تشویش ہے ،منور انجم

سکیورٹی اکیڈمی پر دہشتگردوں کا حملہ باعث تشویش ہے ،منور انجم

  

لاہور( سپیشل رپورٹر) دہشت گردی کے ذریعے کراچی ائیر پورٹ کے قریب سیکورٹی اکیڈمی پر 48 گھنٹوں کے درمیان دوسرے حملے کے واقع میں فائرنگ کے ذریعے خوف وہراس کی کیفیت اور پہلے حملے میں سیکورٹی فورسز کے جوانوں کی بڑے پیمانے میں ہلاکتوں پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کی فیڈرل کونسل کے رکن چوہدری منور انجم اور پیپلز لیبر بیوروکے سیکر ٹری اطلاعات محمد سلیم مغل نے کہا کہ کراچی واقعہ تفتان اور شمالی وزیرستان سمیت ملک میں امن وامان کی مجموعی خراب صورتحال کی ذمہ داری وفاقی حکومت اور سیکورٹی اداروں پر عائد ہوتی ہے لیکن سنگین صورتحال کے پیش نظر ایسا لگتا ہے کہ حکومت کی داخلی سلامتی پالیسی مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے ،وفاق جل رہا ہے اور وفاق پاکستان کو سنگین خطرات لاحق ہوچکے ہیں وزیرداخلہ کہیں دکھائی نہیں دے رہے ۔ انہوں نے کہا کہ روشن پاکستان کے سفر کا آغاز کرنے کی دعویدار مسلم لیگ (ن) کی قیادت قومی سلامتی کی پروا کیے بغیر شاہانہ بیرونی دوروں او ر مال اکٹھا کرنے کی پالیسی پر گامزن ہیں جو بیرونی قرضے لیکر آنے والی نسلوں کو بھی مقروض کرنا چا ہتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی معشیت میں ریڑھ کی ہڈی کراچی کے ائیر پورٹ پر بھارتی ہتھیاروں سے لیس دہشتگردوں کے حملے کے بعد ضروری ہوگیاہے کہ حکومت پاکستان اس بارے میں ٹھنڈے دل اور پوری توجہ سے جائزہ لے کہ وزیر اعظم نواز شریف کے دورہ بھارت کے دوران ان سے محبت کی پینگیں بڑھانے کے خواہش مندوں کی جانب سے بغل میں چھری منہ میں رام رام کا عملی مظاہرہ تو نہیں کیا جارہا ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -