انسٹیٹیو ٹ فار پالیسی ریفارمز کے زیر اہتمام ایک سیمینار کا انعقاد

انسٹیٹیو ٹ فار پالیسی ریفارمز کے زیر اہتمام ایک سیمینار کا انعقاد

  

لاہور(سپیشل رپورٹر)” قومی ترقی میں صوبوں کا کردار اور صوبائی بجٹ کےلئے ترجیحات اور تجاویز“کے عنوان سے لاہور میں سابق وزیر تجارت ہمایوں اختر خان کی زیر صدارت ، انسٹیٹیو ٹ فار پالیسی ریفارمز کے زیر اہتمام ایک سیمینار کا انعقاد کیا گیا سیمینار سے ہمایوں اختر خان کے علاوہ سابق وزیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ پاشا نے بھی اظہار خیال کیا سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے آئی پی آ ر کے چیئر مین ہمایوں اختر خان نے کہا کہ اٹھارویں ترمیم کے بعد صوبائی حکومتوں کی اہمیت میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے این ایف سی ایوارڈ کی صوبوں کو منتقلی کی وجہ سے صوبوں کے وسائل میں اضافہ ہو ا ہے نیز اٹھارویں ترمیم کے بعد صوبے کافی حد تک خود مختار ہو گئے ہیں صوبائی خودمختاری میں اضافے کے بعد اب صوبوں کو بھی اپنی کارکردگی بہتر کرنا ہو گی جس میں ریونیو بڑھانے کے علاوہ قومی ترقی میں بھی اپنا حصہ بڑھانا ہو گا اب صوبائی حکومتوں کو اپنی ترقی کی منازل طے کرنے کےلئے ایک بہترین ویژن کو مد نظر رکھتے ہوئے اپنی آمدن کے ہدف کو پورا کرنا ہو گا تا کہ وہ نہ صرف اپنے اپنے صوبوں کی تعمیرو ترقی میں اضافہ کر سکیں بلکہ قومی سطح پر اپنا کردار ادا کریں ۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے آئی پی آر کے منیجنگ ڈائریکٹر اور معروف ماہر معاشیات نے صوبوں کی کارکردگی کا جائزہ پیش کیا ۔

اور اپنی سفارشات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ صوبوں کو زیادہ سے زیادہ وسائل پیدا کرنے کی ضرورت ہے اور آئندہ تین سال میں صوبے جی ڈی پی میں ایک فیصد اضافہ کرنا ہو گا ڈاکٹر حفیظ پاشا نے مزید کہا کہ صوبوں کو ان چیزوں پر توجہ دینا ہوگی جو زیادہ سے زیادہ ٹیکس مہیا کرنے کی گنجائش رکھتے ہوں خاص طور پر زرعی ٹیکس،شہری علاقوں میں غیر منقولہ پراپرٹی ٹیکس اور صوبوں کی طرف سے سروسز پر سیلز ٹیکس وغیرہ شامل ہیں ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -