روزہ انسان کے مدافعتی نظام کو نئی توانائی فراہم کر تا ہے، بشیر مہدی

روزہ انسان کے مدافعتی نظام کو نئی توانائی فراہم کر تا ہے، بشیر مہدی


لاہور(جنرل ر پورٹر) محمد علی جناح میڈیکل کمپلیکس کے چیئرمین بشیر مہدی نے کہا ہے کہ جوں جوں عقل ترقی کر رہی ہے حیرت انگیز علوم سے آشنائی کا عمل بھی جاری ہے۔ خاص طور پر میڈیکل سائنس کے حوالے سے کچھ عرصے پہلے تک یہی خیال کیا جاتا تھا کہ روزہ نظام انہضام کو آرام پہنچانے کا ایک مفید ذریعہ ہو سکتا ہے لیکن جدید طب سے وابستہ ماہرین اس حقیقت سے پردہ اٹھانے میں کامیاب ہو گئے ہیں کہ روزہ ایک حیرت انگیز طبی علاج ہے جو نہ صرف انسان کے مدافعتی نظام کو نئی توانائی فراہم کر سکتا ہے بلکہ پورے مدافعتی نظام کو دوبارہ سے تخلیق کر سکتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ماہ رمضان کی آمد آمد کے حوالے سے منعقدہ اجلاس خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر دیگر مقررین نے محمد علی جناح میڈیکل کمپلیکس کا خدمت خلق کا فریضہ ادا کرنے پر سراہااور مخیر حضرات سے اپیل کی کہ اس کارِ خیر میں حصہ ڈال کر ادارے کو مضبوط بنانے میں معاون ثابت ہوں ان کا کہنا ہے کہ صرف تین دن تک لگاتار روزے کی حالت میں رہنے سے جسم کا مدافعتی نظام پورا کا پورا نیا ہو سکتا ہے۔ کیونکہ روزہ سے جسم کو نئے سفید خون کے خلیات بنانے کی تحریک ملتی ہے سرطان میں مبتلا افراد یا معمر ہونے کی وجہ سے غیر مؤثر مدافعتی نظام کو روزہ ایک نئے مدافعتی نظام میں تبدیل کر سکتا ہے۔ا

نھوں نے کہا کہ جب آپ بھوکے ہوتے ہیں تو یہ نظام توانائی بچانے کی کوشش کرتا ہے اور روزے دارکا بھوکا جسم ذخیرہ شدہ گلوکوز اور چربی کو استعمال کرنے پر مجبور ہوجاتا ہے۔ لیکن اس کے ساتھ ساتھ توانائی محفوظ کرنے کے لیے مدافعتی نظام کے خلیات کا بھی استعمال کرتا ہے جس سے سفید خلیات کا ایک بڑا حصہ بھی ٹوٹ پھوٹ جاتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4