آئندہ ہفتے موسم گرما کی تعطیلات نہ دینے والوں کےخلاف کارروائی کریں گے، ترجمان محکمہ تعلیم

آئندہ ہفتے موسم گرما کی تعطیلات نہ دینے والوں کےخلاف کارروائی کریں گے، ...

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) تلملاتی دھوپ اور بڑھتی ہوئی گرمی کی شدت نجی سکولوں کے مالکان کے دل موم نہ کر سکی،نام نہاد سمر کیمپوں میں ننھے بچوں کی حالت غیر ہونے لگی،معتدد بچے علم حاصل کرنے کے بجائے بیمار ہونے لگے پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشنز سمر کیمپ جاری رکھنے پر بضد جبکہ محکمہ ایجوکیشن خاموش تماشائی بن گیا آئندہ ہفتے موسم گرما کی تعطیلات نہ دینے والے تعلیمی اداروں کے خلاف سخت کاروئی کریں گے ،ترجمان محکمہ تعلیم۔تفصیلات کے مطابق آگ برساتے سورج،شدید گرمی اور لوڈشیڈنگ کے باوجود لاہور سمیت صوبہ بھر کے نجی تعلیمی اداروں میں گرمیوں کی چھٹیاں تاحال نہ ہو سکیں جسکے باعث بچوں کے ساتھ والدین میں مایوسی پائی جاتی ہے محکمہ تعلیم پنجاب کی طرف سے نہ صرف موسم گرما کی تعطیلات کے کا شیڈول جاری کیا گیا بلکہ چھٹیوں کی مد میں تین ماہ کی اکھٹی فیس نہ لینے کے احکامات بھی جاری کئے گئے تھے جنہیں نجی سکولوں کی طرف سے ہوا میں اڑا تے ہوئے سمر کیمپوں کے نام پر بھی فیس لینا شروع کر دی اور موسم گرما کی چھٹیاں 15جون کو کرنے کا اعلان کر دیا نجی سکولز ایسوسی ایشن کے سربراہ کاشف مرزا کا کہنا ہے کہ سمر کیمپ کے نام پر فیسیں لینے والے نجی تعلیمی اداروں کی مذمت کرتے ہیں اور محکمہ تعلیم کو ان سکولواں کے خلاف کارروائی کرنی چاہیے۔

سمر کیمپ کے انعقاد کا مقصد بچوں کومیٹرک کے سالانہ امتحانات کی بہترین تیاری کروانا ہے جبکہ 15جون سے موسم گرما کی تعطیلات دے دی جائیں گی۔آل پاکستان پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن کے صدر ادیب جاودانی کا کہنا ہے کہ نجی سکولوں کی انتظامیہ کو بجلی اور ٹھنڈے پانی کا مناسب انتظام کرنا چاہیے اور سمر کیمپ کا دورانیہ گرمی کی شدت کے لحاظ سے رکھنا چاہیے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4