دہشتگردوں کیخلاف پالیسی واضح کی جائے

دہشتگردوں کیخلاف پالیسی واضح کی جائے
دہشتگردوں کیخلاف پالیسی واضح کی جائے

  

                            ملتان(اے این این)پیپلزپارٹی کے رہنماءاور سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ وزیراعظم فوری طورپر پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلا کر دہشت گردی اور شدت پسندی کے بارے میں اپنی پالیسی واضح کریں اگر یہ ابہام رہ گیا تو دہشت گردی مزیدبڑھے گی، حکومت 5 سال پورے کرتی ہے یا نہیں ،ہمیں اس سے کوئی سروکار نہیں عوام سے کیے گئے وعدے پورے ہونے چاہئیں ، پوری دنیا میں صحت اور تعلیم پر توجہ دی جارہی ہے مگر ہمارے حکمران ٹرانسپورٹ کو ترجیح دے رہے ہیں ۔ منگل کو ملتان ایئرپورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ پاکستان دہشت گردی کےخلاف جنگ میں صف اول کے ملک کی حیثیت سے کردارادا کررہاہے ہم پوری دنیا کے امن کےلئے لڑ ررہے ہیں اور قربانیاں دے رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ سانحہ کراچی افسوسناک ہے سیکورٹی اداروں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں جن کے جوانوں نے ہمارا کل محفوظ کرنے کیلئے اپنا آج قربان کیا حکومت کراچی ایئرپورٹ پر بھارتی اسلحہ پکڑے جانے کی تحقیقات کرائے حکومت کی توجہ صرف کراچی پر نہیں بلکہ پورے ملک پر ہونی چاہیے کہیں ایسانہ ہوکہ دہشت گرد کسی ایک شہرکی طرف توجہ مبذول کراکے دوسری جگہ کو نشانہ بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ موجود حکومت نے ابھی تک کوئی خارجہ پالیسی نہیں بنائی لگتاہے کہ خارجہ پالیسی پارلیمنٹ بنائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے حکومت طالبان سے مذاکرات یاآپریشن کرنے کا مینڈیٹ دیا ہے اس حوالے سے حکومت جوبھی راستہ اختیارکرے ہم ساتھ کھڑے ہیں ۔  انہوں نے کہا کہ حکومت 5 سال پورے کرتی ہے یا نہیں ہمیں اس سے کوئی سروکار نہیں عوام سے کیے گئے وعدے پورے کئے جانے چاہئیں کیونکہ اگر ایسا نہ ہوا تو عوام سیاستدانوں سے مایوس ہوجائیں گے۔

یوسف رضاگیلانی

مزید : صفحہ اول