کراچی اے ایس ایف اکیڈمی پر دہشتگردوں کا حملہ ناکام گھر گھر تلاشی ،2گرفتار

کراچی اے ایس ایف اکیڈمی پر دہشتگردوں کا حملہ ناکام گھر گھر تلاشی ،2گرفتار ...

کراچی (سٹاف رپورٹر)اے ایس ایف کے جانبازوں نے کراچی ایئرپورٹ سے متصل اے ایس ایف اکیڈمی اور اسلحہ ڈپو پر دہشت گردوں کا حملہ پسپاکردیا ۔ بھرپور جوابی کارروائی کے بعد دہشت گرد فرار ہوگئے ۔تفصیلات کے مطابق جدید ہتھیاروں سے لیس ملزمان نے کراچی ایئرپورٹ سے متصل اے ایس ایف کے کیمپ نمبر 2 پر دھاوا بول دیا جب کہ اے ایس ایف، رینجرز اور پولیس اہلکاروں کی جانب سے جوابی کارروائی کی گئی۔ اے ایس ایف ذرائع کا کہنا ہے گاڑی میں 5 حملہ آوروں نے پہلوان گوٹھ اور کچی آبادی والے علاقے سے ایئرپورٹ پر حملہ آور ہونے کی کوشش کی تاہم سکیورٹی اہلکاروں کی جانب سے بھرپور جوابی کارروائی کی گئی۔ حملے کے دوران فائرنگ سے پورا علاقہ گونج اٹھا جب کہ علاقہ مکینوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔سیکیورٹی حکام کا کہنا ہے جوابی کارروائی میں دہشت گردوں کا حملہ پسپا کر دیا گیا ہے جب کہ حملہ آور گلستان جوہر کی جانب فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں نے جس مقام سے حملہ کیا سیکیورٹی فورسز نے اس کا محاصرہ کر کے دہشت گردوں کی تلاش کے لئے آپریشن کیا اور دو افراد کو گرفتار کرلیا جب کہ علاقے کی فضائی نگرانی بھی کی جاتی رہی۔اس دوران میں دہشت گردوں کے حملے کے نتیجے میں عارضی طور پر معطل کیا جانے والا فلائٹ آپریشن بحال کر دیا گیا ہے۔ترجمان اے ایس ایف کے مطابق مسلح دہشت گردوں نے اے ایس ایف اکیڈمی اور اسلحہ ڈپو پر حملہ کیا ۔5کے قریب دہشت گردوں نے اکیڈمی گیٹ اور ٹریننگ کیمپ گیٹ سے اندر داخل ہونے کی کوشش کی ۔اے ایس ایف اسکائی مارشل نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے دہشت گردوں کا حملہ پسپا کردیا ۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے رہنما خالد عمر خراسانی کے نے اپنے ایک پیغام میں کراچی میں اے ایس ایف اکیڈمی پر حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم ایک بار پھر ایئرپورٹ میں آگئے ہیں۔واضح رہے کہ اتوار اور پیر کی درمیانی شب بھی جدید ہتھیاروں سے لیس 10 دہشت گردوں نے کراچی ایئرپورٹ کے اولڈ ٹرمینل پر حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں اے ایس ایف، رینجرز اور پولیس اہلکاروں سمیت 26 افراد جاں بحق جب کہ 10 حملہ آور مارے گئے تھے۔

مزید : صفحہ اول