فنکاری کام نہ آئی ، منشیات سے بھرے پاکستانی قالین برطانیہ میں پکڑے گئے

فنکاری کام نہ آئی ، منشیات سے بھرے پاکستانی قالین برطانیہ میں پکڑے گئے
فنکاری کام نہ آئی ، منشیات سے بھرے پاکستانی قالین برطانیہ میں پکڑے گئے

  

لندن (نیوز ڈیسک) پاکستان میں ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں، ہم یہ بات دن رات سنتے رہتے ہیں اور برطانیہ کے مانچسٹر ایئرپورٹ پر پکڑے جانے والے پاکستانی قالین اس بات کا منہ بولتا ثبوت ہیں کہ ان کو بنانے کیلئے درکاری فنکاری شاید دنیا میں اور کہیں دستیاب نہیں، بس بدقسمتی کی بات یہ ہے کہ اس فنکاری کو پاکستان کی نیک نامی کی بجائے بدنامی اور شرمندگی کیلئے استعمال کیا گیا ہے کیونکہ ان دلکش قالینوں کے اندر اربوں روپے کی ہیروئن کو انتہائی مہارت سے بن دیا گیا تھا۔ مانچسٹر ایئرپورٹ پر سیکیورٹی پر مامور افسران اور ان کے سونگھنے والے کتوں نے پاکستان کے شہر پشاور سے آنے والے انتہائی خوبصورت اور نفیس قالینوں کو مشکوک قرار دے کر اُن کی جانچ پڑتال شروع کردی۔ تفصیلی معائنے پر معلوم ہوا کہ ان قالینوں کو بناتے وقت ہیروئن کے انتہائی چھوٹے چھوٹے پیکٹ کمال مہارت کے ساتھ اُون کے ساتھ ہی بُن دئیے گئے تھے اور ان کا پتا چلانا اس قدر مشکل کام تھا کہ یہ قالین پشاور سے روانہ ہوکر ابوظہبی سے گزرتے ہوئے بحفاظت انگلینڈ تک پہنچ چکے تھے اور بس کچھ ہی لمحوں میں ایئرپورٹ کی حدود سے نکلنے والے تھے۔ سیکیورٹی حکام اب تک چھوٹے سائز کے 46 قالینوں میں سے تقریباً 50 کلو اعلیٰ درجے کی ہیروئن برآمد کرچکے ہیں جس کی قیمت اربوں روپے بتائی جارہی ہے۔ مانچسٹر ایئرپورٹ کے حکام کا کہنا ہے کہ جب سے یہ ایئرپورٹ کام کردیا ہے انہوں نے کبھی اتنی بڑی مقدار میں ہیروئن نہیں پکڑی۔ حکام نے کارروائی کرتے ہوئے لندن میں مقیم دو افراد کو گرفتار کیا ہے جن کی شناخت ابھی ظاہر نہیں کی گئی ہے۔

مزید : بین الاقوامی