طالبان کے بعد ازبک اسلامک گروپ نے بھی کراچی ایئرپورٹ حملے کی ذمہ داری قبول کرلی

طالبان کے بعد ازبک اسلامک گروپ نے بھی کراچی ایئرپورٹ حملے کی ذمہ داری قبول ...
طالبان کے بعد ازبک اسلامک گروپ نے بھی کراچی ایئرپورٹ حملے کی ذمہ داری قبول کرلی

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) تحریک طالبان کے بعد کراچی حملے کی ذمہ داری اسلامک موومنٹ آف ازبکستان نے بھی قبول کرلی ہے جس کے بعد سوالات اُٹھناشروع ہوگئے ہیں ،دوسری طرف ایئرپورٹ حملے کی تحقیقات کے لیے ڈی آئی جی ایسٹ کی سربراہی میں ٹیم تشکیل دیدی گئی ہے ۔

غیر ملکی خبررساں ایجنسی کے مطابق القاعدہ سے منسلک ازبک گروپ نے ذمہ داری قبول کرلی ہے اور گروپ کے رہنماءعثمان غنی نے مزید حملوں کا بھی عندیہ دیدیا۔آئی ایم یو نے مبینہ طورپر 10حملہ آوروں کی تصاویربھی جاری کردی ہیں اور کہاہے کہ یہ حملہ پاکستان کے قبائلی علاقوں میں ہونیوالے آپریشن کے ردعمل میں کیاگیاہے ۔ تجزیہ نگاروںکاکہناتھاکہ دونوں گروپوں کو الگ الگ نہیں دیکھ سکتے ، کسی حدتک وہ لوگ طالبان کوٹریننگ بھی دیتے رہے ہیں ۔

یادرہے کہ اس سے قبل ایئرپورٹ پر حملے کو حکیم اللہ محسود کی ہلاکت کا بدلہ قراردیتے ہوئے ذمہ داری تحریک طالبان کے ترجمان شاہد اللہ شاہد جبکہ اے ایس ایف کیمپ پر حملے کی ذمہ داری تحریک طالبان مہمندایجنسی کے طالبان عمرخالدخراسانی قبول کرچکے ہیں ۔ دوسری طر ف ایڈیشنل آئی جی کراچی غلام قادر تھیبو نے بتایاکہ حملے کی تحقیقات کیلئے ٹیم تشکیل دیدی گئی ہے اور ابتدائی تحقیقات کے مطابق ملزم جہاز اورعملے کو یرغمال بناناچاہتے تھے جن کے قبضے سے سمیں اورموبائل بھی ملے ہیں ۔ اُنہوں نے بتایاکہ ملزموں نے دوسرے شہروں سے آکر حملہ کیا، کراچی کے قریبی شہر میں روپوش تھے اور وہیں حملے کا منصوبہ بنایاگیا۔

مزید :

کراچی -اہم خبریں -