میری جان کو خطرہ لاحق ،اسلام آباد آمد پر کچھ ہوا تو حکومت ذمہ دار ہوگی: طاہر القادری

میری جان کو خطرہ لاحق ،اسلام آباد آمد پر کچھ ہوا تو حکومت ذمہ دار ہوگی: طاہر ...
میری جان کو خطرہ لاحق ،اسلام آباد آمد پر کچھ ہوا تو حکومت ذمہ دار ہوگی: طاہر القادری

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ اگر مجھے ،میرے خاندان یا میری قیادت کو کسی بھی قسم کا نقصان پہنچا تو اس کے ذمہ دار وزیر اعظم میاں نواز شریف اور وزیر قانون پنجاب رانا ثناءاللہ سمیت آٹھ لوگ ہوں گے ،انہوں نے اپنی حفاظت کے لیے فوج سے اپیل کر تے ہوئے کہا کہ 23جون کو میری اسلام آباد ایئر پورٹ آمد کے موقع پر پاک فوج ہوائی اڈے کا کنٹرول سنبھال لے کیوں کہ موجودہ حکمران اپنے مفادات کے لیے کسی بھی حد تک جا سکتے ہیں۔ لاہور میں کارکنوں سے ویڈیو لنک کے ذریعے اپنے خطاب میں ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ مجھ پر حملہ ہو سکتا ہے، اس لئے پاکستان آمد سے قبل ایڈوانس ایف آئی آر درج کروا کر آ رہا ہوں، اگر مجھے یا میری قیادت کے کسی بھی فرد کو کوئی نقصان پہنچا تو اس کے ذمہ دار وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف، وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف، وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان، وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق، صوبائی وزیر قانون رانا ثناءاللہ، وزیر مملکت برائے پانی و بجلی عابد شیر علی، وفاقی وزیر پانی و بجلی اور وزیر دفاع خواجہ آصف اور وفاقی وزیر اطلا عات و نشریات پرویز رشید ہونگے۔ ان کا کہنا تھا کہ مجھے پاکستان آنے سے روکنے کی کوشش کی گئی تو اس کے نقصان کی ذمہ دار بھی حکومت ہوگی اور تمام نتائج کو بھگتنا اس کے سر ہوگا۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ موجودہ حکمران دہشت گردوں کے حقیقی سربراہ ہیں، دہشت گردوں کے کچھ گروہ پنجاب حکومت کے کنٹرول میں ہیں اور یہ جس وقت جہاں چاہیں دہشت گردی کروا سکتے ہیں۔ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ میری آمد 23 جون کو اسلام آباد ایئر پورٹ پر ہوگی، فوج کو بتا رہا ہوں کہ ہمیں حکمرانوں پر کوئی اعتبار نہیں ہے اس لئے فوج ایئر پورٹ کی سیکیورٹی اپنے ہاتھ میں لے۔ ان کا کہنا تھا کہ میں آئین پا کستان پر یقین رکھتا ہوں لیکن موجودہ نظام کیخلاف ہوں، پاکستان کے مسائل کا حل انتخابات نہیں بلکہ انقلاب ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ موجودہ نظام اشرافیہ کا تحفظ کرتا ہے اور اس نظام میں چند لوگوں کی بادشاہت قائم رہے گی ،20کروڑ عوام اس نظام کے تحت ہمیشہ محکوم ہی رہیں گے ۔

مزید :

لاہور -اہم خبریں -